بند کریں
شاعری یوسف حسن

کیا کچھ تہِ آب ہو رہا ہے

-

kiya kuch teeh aab ho raha hai


(288) ووٹ وصول ہوئے