بند کریں
شاعری ظفر اقبال

دور رہ کر نہ اسے پاس بلانے سے کیا

-

door reh kar na usse pass bulane se kiya


(308) ووٹ وصول ہوئے