بند کریں
شاعری ظفرترمذی

درد و رنج و الم دیے ہوتے

-

dard o ranjh o alaam diye hote


(133) ووٹ وصول ہوئے