بند کریں
شاعری ظفرترمذیہزار بار اگر حشر ہو تو غم کیا ہے

(130) ووٹ وصول ہوئے