مطلع صاف ہے واشنگٹن
3.2°C
شہر تبدیل کریں | موسم کی پیشن گوئی 🔄
بند کریں
شاعری آپکی شاعریفرمان علی ارماناس نے محبتوں سے پکارا تو ہے نہیں
اس نے محبتوں سے پکارا تو ہے نہیں
اس نے محبتوں سے پکارا تو ہے نہیں
دل کا بھی اس جہاں میں سہارا تو ہے نہیں

ہر گام پہ نظر میں ہے منزل نئی نئی
آنکھوں میں میری کوئی نظارہ تو ہے نہیں

رہتے ہیں گرچہ آنکھوں میں رنگیں خیال بھی
اس شخص کے سوا بھی گزارا تو ہے نہیں

دو پل ہیں زندگی کے یہ ہنس کر گزارئے
دنیا میں ہم نے آنا دوبارا تو ہے نہیں

اب ٹھہریں ترے دل میں یا پھر جائیں کہیں اور
رکنے کا کوئی ہم کو اشارہ تو ہے نہیں

ملتا ہے پیار اس کو جہاں ، جاتا ہے ادھر
ارمان سدا رہتا تمہارا تو ہے نہیں
فرمان علی ارمان © جملہ حقوق بحق ادارہ اُردو پوائنٹ محفوظ ہیں۔
© www.UrduPoint.com

دوستوں کے ساتھ شئیر کیجئے