Hey By Fouzia Bhatti

ح - فوزیہ بھٹی

Hey in Urdu
اس ایک ”واحد“ اللہ پر بھروسہ رکھنا! مجھ سے زیادہ، خود سے بھی زیادہ۔ یہ بھروسہ تمہاری روح کی رگوں میں دوڑنے والا وہ نور ہے جو ایمان کی حرارت اور زندگی بخشتا ہے۔ اس ایک ”کن فیکون“ پر بھروسہ رکھنا۔ بس اس ایک کن فیکون پر بھروسہ رکھنا۔
آج کربلا میں بارش برس رہی تھی۔ آج کسی کو پیاسا نہ رہنا تھا۔ محبتوں کو بھی سیر ہونا تھا اور خشک زندگیوں کو بھی جل تھل ہو جانا تھا۔ آج زندگی کا ”محرم“ جا رہا تھا۔ آج تو عید کا دن تھا۔ خوشیوں بھرا دن تھا۔ کربلا میں جل تھل ہو گیا تھا۔ ہریالی تھی، عشق حقیقی کے پھول جا بجا بکھرے پڑے تھے جو چاہے لے لے۔ جو مانگو مِل جائے کہ آج زندگی کی کربلا میں عید کا دن تھا۔ پیاسوں کی پیاس بجھنے کا دن تھا، سجدہ شکر کا دن تھا۔

Chapters / Baab of Hey

قسط نمبر 1

قسط نمبر 2

قسط نمبر 3

قسط نمبر 4

قسط نمبر 5

قسط نمبر 6

قسط نمبر 7

قسط نمبر 8

قسط نمبر 9

قسط نمبر 10

قسط نمبر 11

قسط نمبر 12

قسط نمبر 13

قسط نمبر 14

قسط نمبر 15

قسط نمبر 16

قسط نمبر 17

قسط نمبر 18

قسط نمبر 19

قسط نمبر 20

قسط نمبر 21

قسط نمبر 22

قسط نمبر 23

قسط نمبر24

آخری قسط