شادی ہالوں سے اضافی ٹیکس وصولی کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

شادی ہالوں سے اضافی ٹیکس وصولی کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 اگست2018ء) لاہور ہائیکورٹ میں فائننس ایکٹ میں ترمیم اورشادی ہالوں سے اضافی ٹیکس وصولی کا اقدام چیلنج کردیا گیا۔لاہورہائیکورٹ میں راطارق اسلام نے اے کے ڈوگرہ ایڈووکیٹ کی وساطت سے فائننس ایکٹ میں ترمیم اورشادی ہالوں سے اضافی ٹیکس وصولی کا اقدام چیلنج کیا۔

(جاری ہے)

درخواست میں وفاقی حکومت سمیت وزارت خزانہ اور دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست گزارنے موقف اختیارکیا کہ فائننس ایکٹ میں ترمیم آئین وقانون کے منافی ہے، فائننس ایکٹ میں ترامیم کرکے شہریوں سے اضافی ٹیکس وصول کیا جا رہا ہے، فائننس ایکٹ میں ترمیم سے شادی ہالزکا کاروبار ٹھپ ہونے کا خدشہ ہے اس لیے عدالت شادی ہالوں سے اضافی ٹیکس وصولی سے روکے اورفائننس ایکٹ میں ترامیم کو کالعدم قراردے۔

Your Thoughts and Comments