جنرل سیلز ٹیکس کی شرح میں اضافہ نہ کرنا خوش آئند ہے ،راولپنڈی چیمبر

ْراولپنڈی چیمبر آف کامرس کا نان فائلرز پر جائیداد خریداری پر پابندی کے خاتمہ کا خیر مقدم

جنرل سیلز ٹیکس کی شرح میں اضافہ نہ کرنا خوش آئند ہے ،راولپنڈی چیمبر
راولپنڈی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 12 جون2019ء) راولپنڈی چیمبر آف کامرس نے مالی بجٹ 2019-20 میں نان فائلرز پر جائیداد خریداری پر پابندی کے خاتمہ کی تجویز کا خیر مقدم کیا ہے اور کہاہے کہ اس اقدام سے رئیل اسٹیٹ کا شعبہ ترقی کرے گا ۔راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر ملک شاہد سلیم نے مالی بجٹ پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ نئے بجٹ سے معیشت کو دستاویزی شکل دینے میں مدد ملے گی، ایکٹو ٹیکس پیئرز لسٹ کو آن لائن اور چوبیس گھنٹے میں اپڈیٹ کرنے کا فیصلہ خوش آئند ہے، ٹیکس دہندگان کے لیے سہولت ہو گی۔

راولپنڈی چیمبرکے صدر نے جنرل سیلز ٹیکس کی شرح سترہ فی صد برقرا ر رکھنے کی تجویز کو بھی خوش آئند قرار دیا تاھم کہاکہ فوڈ آئٹمز پر ٹیکس کے نفاذ سے گھریلو بجٹ متاثر ہو گا۔

(جاری ہے)

سیمنٹ، پولٹری،کوکنگ آئل اور چینی پر سیلز ٹیکس کے اضافے سے مہنگائی مزید بڑھے گی۔صدر چیمبر نے کہاکہ امید ہے محصولات کی اہداف پورے کرنے کے لیے ٹیکس دہندگان کو ہراساں نہیں کیا جائیگا، لگثری گاڑیوں اور امپوٹڈ آئٹمز پر ڈیوٹی کا نفاذ خوش آئند ہے۔ تاہم ہزار سی سی تک کی گاڑیوں پر ڈیوٹی کی شرح واپس لی جائے، پی ایس ڈی پی کے لیے رقم مختص کرنے سے معشیت کا پہیہ چلانے میں مدد ملے گی۔ سیلری اور نان سیلری کلاس کے لیے انکم ٹیکس کے یکساں سلیب نافذ کیے جائیں۔

Your Thoughts and Comments