دشمنوں کے تمام منصوبوں کو ناکام بنا دیا گیا، پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں زبردست تیزی کے بعد کاروباری روز کا مثبت اختتام

100 انڈیکس میں 242.31 پوائنٹس کی تیزی دیکھی گئی، 34 ہزار کی نفسیاتی حد ایک مرتبہ پھر بحال ہو گئی، سرمایہ کاروں کو اربوں روپے کا فائدہ ہوا

دشمنوں کے تمام منصوبوں کو ناکام بنا دیا گیا، پاکستان اسٹاک ایکسچینج ..
کراچی (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔29 جون 2020ء) دشمنوں کے تمام منصوبوں کا ناکام بنا دیا گیا، پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں زبردست تیزی کے بعد کاروباری روز کا مثبت اختتام، 100 انڈیکس میں 242.31 پوائنٹس کی تیزی دیکھی گئی، 34 ہزار کی نفسیاتی حد ایک مرتبہ پھر بحال ہو گئی، سرمایہ کاروں کو اربوں روپے کا فائدہ ہوا۔ تفصیلات کے مطابق ملک کے سرمایہ کاروں نے مشکل حالات اور دہشت گردانہ حملے کے باوجود کمال جرات کا مظاہرہ کیا اور پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں بھرپور سرمایہ کاری کر کے دشمن کو منہ توڑ جواب دیا ہے۔

دہشت گردوں کے حملے کے بعد مندی کا شکار اسٹاک ایکسچینج میں زبردست تیزی دیکھی گئی۔ پیر کو کاروباری ہفتے کے پہلے روز جب کاروبار کا آغاز ہوا تو پہلے ہی گھنٹے کے دوران 100 انڈیکس میں 50 پوائنٹس کی مندی ریکارڈ کی گئی۔

(جاری ہے)

بعد ازاں دہشت گرد حملہ ہونے کے بعد سرمایہ کاروں نے جرأت مندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹریڈنگ میں بھرپور حصہ لیا۔ سرمایہ کاروں کی بھرپور دلچسپی کے باعث دوپہر تک 100 انڈیکس میں 150 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

ٹریڈنگ کے دوران اُتار چڑھاؤ آتا رہا اور ایک موقع پر اسٹاک مارکیٹ 33719.51 پوائنٹس کی نچلی ترین سطح پر چلی گئی۔ پھر جب سرمایہ کاروں نے بھرپور دلچسپی دکھائی تو حصص مارکیٹ میں دوبارہ تیزی دیکھنے میں آئی۔ اسی باعث کاروبار کے اختتام تک 100 انڈیکس میں 242.31 پوائنٹس کا کل اضافہ ہوا اور 100 انڈیکس 34181.80 پوائنٹس کی سطح تک آگیا۔ یوں کئی روز بعد پاکستان سٹاک مارکیٹ میں 34 ہزار کی نفسیاتی حد بحال ہوگئی۔ پیر کو کاروبارہ روز کے دوران اسٹاک ایکسچینج میں کل 9 کروڑ 80 لاکھ 67 ہزار 622 شیئرز کا لین دین ہوا۔ جہاں سرمایہ کاروں نے بھرپور سرمایہ کاری کی، وہیں انہیں اربوں روپے کا فائدہ بھی ہوا۔

Your Thoughts and Comments