X

ایف پی سی سی آئی کارکردگی کے اعتبار سے بیان بازی، فوٹوسیشنز اور تقریبات تک محدود ہوگیا ہے،میاں زاہد حسین

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 دسمبر2018ء) بز نس مین پینل پاکستان کے صدارتی امیدوار سابق وزیر اعلی بلوچستان علائوالدین مری نے پاکستان کی مختلف ایسوسی ایشنز کے وفود اور کاروباری شخصیات سے بی ایم پی الیکشن آفس میں ملا قات کے دوران کہا کہ پاکستان خداداد وسائل سے مالامال ملک ہے لیکن بدقسمتی سے فیصلہ سازوں نے اس ملک کی ترقی کے لئے حتی الوسع کوششیں نہیں کیں جس کے باعث پاکستان کی صنعت، معیشت اور تجارت سمیت ہر شعبہ زوال کا شکار ہے۔

تاجروں اور صنعتکاروں کے مسائل کے حل کے لئے سب سے بڑا ادارہ ملک میں FPCCIہے جس کا کردار ملکی صنعت وتجارت کی ترقی کے لئے محض بیانات، جھوٹے وعدوں اور تصنع سے بھرپور تقریبات تک محدود ہے۔ا س موقع پرسینئر وائس چیئرمین بز نس مین پینل میاں زاہد حسین نے کہاکہFPCCIکے موجودہ نام نہاد بر سراقتدارگروپ نے بزنس کمیونٹی کے مسائل کویکسر نظر انداز کردیا ہے، ہماری جدوجہد کا مقصد بزنس کمیونٹی کے دیرینہ مسائل کا حل اور ملکی معیشت کی ترقی ہے ۔

آج تک فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کوئی تحقیقی ادارہ یا ونگ قائم نہیں کرسکی جو ملک میں موجود معاشی اور صنعتی پوٹینشل کو دنیا کے سامنے لاسکے اور دنیا بھر سے سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری پر آمادہ کرسکے۔علائوالدین مری نے کہا کہ برآمدات کنندگان کے ٹیکس ریفنڈز گزشتہ چار سالوں میں 100ارب روپے سے بڑھ کر 400ارب روپے تک پہنچ گئے جس کے باعث برآمداتی شعبہ زوال کا شکار ہوگیا، لیکن ایف پی سی سی آئی پر قابض گروپ زبانی وعدوں اور بیان بازی سے زیادہ کچھ نہیں کرسکی۔

رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں ہی تجارتی خسارہ 13ارب ڈالر ہوگیا جس کو قابو کرنے کے لئے برآمدات میں اضافہ ناگزیر ہے۔ بی ایم پی نے ہمیشہ بزنس کمیونٹی کودرپیش مسائل کو ملکی سطح پر اجاگر کرنے کے لئے کام کیا ہے اور ان مسائل کے ممکنہ حل کے بارے میں حکومت کو اپنی سفارشات پیش کیں ہیں۔BMPکے صدارتی امیدوار سابق وزیر اعلی بلوچستان علائو الدین مری نے نمائندہ وفود اور کاروباری شخصیات سے کہا کہ پاکستان معاشی و اقتصادی طور پر اس وقت انتہائی مشکلات کا شکار ہے،بز نس مین پینل پاکستان ان مشکلات کو دور کرنے کے لئے FPCCIالیکشن میں کامیابی کے حصول کے قریب ہے ۔

بی ایم پی فیڈریشن الیکشن میںکامیابی کے بعد ملک میں صنعتکاروں کی عزت کی بحالی، سرمایہ کاروں کے تحفظات دور کرنے اور صنعت و تجارت کو درپیش مسائل کے حل کرنے کے لئے ٹھوس اور عملی اقدامات کرے گی۔ FPCCIکے بر سراقتدار گروپ اگر صنعت کاروں ، تاجروں ، سرمایہ کاروں کی عزت کا خیال کرتے ہوئے جائز اور فوری بز نس مسائل کے حل پر توجہ دیتا تو آ ج ہماری معیشت کا یہ حال نہیں ہوتا، لیکن افسوس روم جلتا رہا اور نیرو بانسری بجاتا رہا۔

میاں زاہد حسین نے کہا کہ FPCCIالیکشن میں کامیابی کے بعد ملک کے سب سے بڑے ایون صنعت و تجارت کو معاشی ترقی کے لئے موثر بنائیں گے اور تمام چیمبرز اور ایسوسی ایشنز کے ساتھ مل کے بزنس کمیونٹی کو درپیش مسائل کو حل کرنے کے لئے ٹھوس اقدامات کریں گے اور دنیا بھر سے سرمایہ کاروں کو پاکستان میں موجود سرمایہ کاری کے بے تحاشہ مواقعوں کو سامنے لانے کے لئے FPCCIمیں ریسرچ ونگ قائم کریں گے۔ حکومت ملک میں کاروبار ی آسانی فراہم کرنے کے لئے بزنس کمیونٹی کی سفارشات پر عمل کرے اور تجارت میں اضافہ کے لئے فوری اقدامات کرے۔ملاقا ت کے لئے آنے والی معروف کاروباری شخصیا ت نے بز نس مین پینل پاکستان کی قیادت پر بھرپور اعتماد کا اظہا رکرتے ہوئے الیکشن میں پوری طاقت سے حصّہ لینے اور کامیابی سے ہمکنار ہونے کے عزم کا اعادہ کیا ہے ۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں