افغان شہریوں کا قتل عام بڑی غلطی تھی،نیٹوافواج کا اعتراف

بدھ جنوری 21:06

کابل(اُردو پوائنٹ تازہ ترین۔ 3جنوری2007ء ) افغانستان میں تعینات نیٹو افواج نے اس بات کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ 2006ء کے دوران بڑی تعداد میں افغان شہریوں کا قتل عام ہوا اور یہ ایک بہت بڑی غلطی تھی ۔کابل میں چیف نیٹو ترجمان بریگیڈیئر رچرڈ نیگی نے اپنے ایک بیان میں کہی ۔

(جاری ہے)

بیان میں انہوں نے کہا کہ 2006ء میں طالبان اور مزاحمت کاروں کے خلاف کارروائیوں کے دوران بڑی تعداد میں عام شہریوں کا قتل عام نیٹو کی ایک بڑی غلطی تھی ۔

ترجمان نے کہاکہ کہ سال 2007ء میں سب سے پہلے اس اہم معاملے پر غور کرنے کی ضرورت ہے اور ضرورت اس بات کی ہے کہ مزاحمت کاروں کے خلاف نیٹو فورسز کے آپریشنز کے دوران عام شہریوں کا قتل عام روکنے کے لیے اقدامات کیے جائیں ۔انہوں نے کہاکہ اب نیٹو کی کوشش ہو گی کہ وہ افغان شہریوں کی جان کی حفاظت کریں گی ۔تاہم ابھی تک اس بارے میں اقدامات اٹھائے جانا باقی ہیں ۔

متعلقہ عنوان :