افغان طالبان نے اہم جنگجو کمانڈر منصور داد اللہ کو تنظیم سے نکال دیا، برطرفی کے احکامات مسترد کرتاہوں، دشمنوں کی سازش ہے،طالبان کمانڈر

ہفتہ جنوری 13:55

قندھار(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین ۔2جنوری۔ 2010ء) افغان طالبان نے تحریک کے اہم جنگجو کمانڈر منصور داد اللہ کو تنظیم سے نکال دیا۔ منصور داد اللہ نے اپنی برطرفی کے احکامات کو مسترد کرتے ہوئے اسے دشمنوں کی سازش قراردیا۔ طالبان کے ترجمان ذبیع اللہ مجاہد نے میڈیا کو بتایا کہ سابق طالبان کمانڈر ملا داد اللہ کے بھائی منصور داد اللہ کو ملاعمر کے احکامات کی عدم تعمیل اور اسلامی شریعت کے برعکس سرگرمیوں میں ملوث پر تنظیم سے نکال دیا گیا ہے۔

دوسری جانب منصور داد اللہ نے امریکی خبررساں ادارے سے ٹیلی فون پر بات چیت کرتے ہوئے کہ یہ خبردرست نہیں کہ ملاعمر نے مجھے تنظیم سے برطرف کر دیا ہے۔ اگر ملا عمر مجھے ملیشیاء سے نکل جانے کی خواہش رکھتے تو وہ مجھے براہ راست پیغام بھیجتے ہیں اور میں ان کے احکامات کے تعمیل میں اپنے ہتھیار ڈال دیتا ہے کیونکہ وہ ہمارے اعلیٰ کمانڈر ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ وہ ملاعمر سے رابطے کی کوشش ہوسکتی ہے۔

اگر ملا عمر مجھے مسلح کرنے کی خواہش رکھتے تو انہیں میری برطرفی کی خبر میڈیا میں شائع کرنے کی کوئی ضرورت نہیں تھی، انہوں نے کہا کہ جہاد ذاتی مفادات سے بالاتر ہوکر لڑی جاتی ہے اس میں ایک شخص اسلام کیلئے قتل اور زخمی ہوتا ہے۔ واضح رہے منصور داد اللہ کی قیادت میں طالبان جنگجو جنوبی افغانستان میں اتحادیوں کے خلاف لڑ رہے ہیں۔

متعلقہ عنوان :