جعلی امام مہدی کے پیروکار پانچ سعودیوں کو25سال تک قید کی سزائیں،کویتی امام مہدی کے ہاتھ پر بیعت کی تھی پانچوں مجرموں کو توبہ کیے بغیر جیل سے رہا نہیں کیا جائے گا،استغاثہ

جمعرات ستمبر 23:43

جعلی امام مہدی کے پیروکار پانچ سعودیوں کو25سال تک قید کی سزائیں،کویتی ..

الریاض (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔11ستمبر۔2014ء) سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض میں ایک عدالت نے پانچ سعودیوں کو کویت سے تعلق رکھنے والے ایک جعلی امام مہدی کی پیروی کے جرم میں پانچ سے پچیس سال تک قید کی سزائیں سنادی ،استغاثہ کے مطابق پانچوں سعودی کویتی امام مہدی کے پیروکار تھے اور وہ اس کے ہاتھ پر بیعت کرنے کے لیے کویت گئے تھے۔انھوں نے سعودی عرب میں بھی اس کی تعلیمات پھیلانے کی کوشش کی تھی۔

عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ مدعاعلیہان اگر توبہ نہیں کرتے تو انھیں قید کی مدت پوری ہونے کے بعد رہا نہیں کیا جائے گا۔عدالت نے جیل سے رہائی کے بعد ان پر پانچ سے پچیس سال تک بیرون ملک جانے پر بھی پابندی عاید کردی ۔عدالت نے کہا کہ جج صاحبان نے کثرت رائے سے ان مجرموں کے خلاف فیصلہ دیا ہے اور ایک جج نے تو انھیں سزائے موت دینے کی رائے دی تھی۔

(جاری ہے)

سرکاری وکیل اور مدعاعلیہان نے عدالت کے اس فیصلے پر اعتراض کیا ہے۔تاہم وہ عدالت کے فیصلے کے خلاف ایک ماہ میں نظرثانی کی اپیل دائر کرسکتے ہیں۔عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ تمام مدعاعلیہان نے مبینہ امام مہدی سے ذاتی روابط استوار کررکھے تھے۔ ان میں سے بعض کویت میں اس کے گھر میں رہتے رہے تھے۔انھوں نے اس کی مالی مدد کی تھی اور اس کی ویب سائٹ کو چلاتے رہے تھے۔

اس کے ساتھ ای میل کے ذریعے رابطے میں رہے تھے۔انھوں نے اپنے اس مرشد امام مہدی کی کتب تقسیم کی تھیں اور سوشل میڈیا پر اس کے حق مضامین لکھے اور پوسٹ کیے تھے۔عدالت نے ان میں سے پہلے مدعا علیہ کو پچیس سال قید کی سزا سنائی ہے۔اس کو پہلے بھی جعلی امام مہدی کا پیروکار ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا لیکن اس نے توبہ کر لی تھی اور یہ وعدہ کیا تھا کہ وہ آیندہ تکفیری نظریہ نہیں اپنائے گا جس کے بعد اس کو رہا کردیا گیا تھا۔

عدالت نے کہا ہے کہ ''یہ تمام مدعاعلیہان سعودی مملکت ،اس کی حکومت اور عوام کو کافر خیال کرتے تھے اور ان کا دعوی تھا کہ جو کوئی بھی ان کے مبینہ جعلی امام مہدی کو نہیں مانتا ،وہ مسلمان بھی نہیں ہے''۔عدالت نے دوسرے مدعاعلیہ کو دس سال ،تیسرے کو بیس سال اور چوتھے اور پانچویں مدعاعلیہان کو بالترتیب سات اور پانچ سال قید کی سزا سنائی ہے۔اگر اپیل عدالت سے ان کی درخواست خارج ہوگئی تو پھر انھیں یہ سزا بھگتنا ہوگی۔

متعلقہ عنوان :