جماعت اسلامی کا ملک بھر میں 2ستمبر کو یوم اردو،4ستمبر کو یوم حجاب اور 6ستمبر کویوم دفاع شایان شان طریقے سے منانے کا فیصلہ

اردو ہماری قومی زبان ہے ، انگریز کے پروردہ حکمرانوں نے 70سال سے قوم کو بدیشی زبان کا غلام بنا رکھا ہے ،اس سے لاکھوں نوجوانوں کا مستقبل تباہ ہوا ہے ، امیدہے چیف جسٹس جوادایس خواجہ پاکستان عدالتی کاروائی کو بھی اردو میں تحریر کرنے اور اردومیں سنائے جانے کو یقینی بنائیں گے،قائم مقام امیرجماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ کا اجلاس سے خطاب

پیر اگست 22:58

جماعت اسلامی کا ملک بھر میں 2ستمبر کو یوم اردو،4ستمبر کو یوم حجاب اور ..

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 24 اگست۔2015ء) قائم مقام امیرجماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ کی صدارت میں منصورہ میں ہونے والے جماعت اسلامی کے اعلیٰ سطحی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ ملک بھر میں 2ستمبر کو یوم اردو،4ستمبر کو یوم حجاب اور 6ستمبر یوم دفاع شایان شان طریقہ سے منایا جائے گا۔یوم اردو کے موقع پر اسمبلی حال سے ایک بڑی ریلی نکالی جائے گی ،اجلاس نے مطالبہ کیا کہ حکومت آئندہ سی ایس ایس کے امتحانات اردو میں لے اور تمام سرکاری اداروں کو پابند کیا جائے کہ وہ اپنی کاروائی قومی زبان میں تحریر کریں تاکہ عام پاکستانی اپنے مقدمات پر ہونے والی سرکاری کاروائی سے آگاہ ہوسکے ۔

اجلاس میں یہ بھی طے کیا گیا کہ یوم حجاب کے موقع پر ملک بھر میں خواتین کے سیمینارز ،جلسے ، جلوس اورمذاکرے منعقد کئے جائیں گے جن میں پردے کی اہمیت اور عریانی و فحاشی کی روک تھا م کیلئے آواز بلند کی جائے گی۔

(جاری ہے)

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے لیا قت بلوچ نے کہا کہ اردو ہماری قومی زبان ہے جو ہماری تہذیب و تمدن اور اعلیٰ قومی روایات کی امین ہے مگر انگریز کے پروردہ حکمرانوں نے 70سال سے قوم کو بدیشی زبان کا غلام بنا رکھا ہے جس کی وجہ سے ہمارے لاکھوں نوجوانوں کا مستقبل تباہ ہوا ہے ،انہوں نے کہا کہ جسٹس جواد ایس خواجہ نے اردو میں حلف لیکر قوم کا سر فخر سے بلند کردیا ہے ،انہوں نے امید ظاہر کی کہ چیف جسٹس آف پاکستان عدالتی کاروائی کو بھی اردو میں تحریر کرنے اور اردومیں سنائے جانے کو یقینی بنائیں گے ،،لیاقت بلوچ نے کہا کہ 6ستمبر کو ملک گیر یوم دفاع شایان شان طریقے سے منایا جائے گا جس میں ملک بھر کے عوام اس عزم کا اظہار کریں گے کہ وہ ملک کے دفاع کیلئے بڑی سے بڑی قربانی سے بھی دریغ نہیں کریں گے اور دفاع وطن کیلئے وہ تن من دھن سے اپنی بہادر افواج کا ساتھ دیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ ملک کی نظریاتی اور جغرافیائی سرحدوں کی حفاظت کیلئے پوری قوم سیسہ پلائی دیوار ثابت ہوگی اور دشمن نے اگر ہماری طرف ٹیڑھی آنکھ سے دیکھنے کی جرأت کی تو اس کو ایسا سبق سکھایا جائے گا جسے وہ زندگی بھر یاد رکھے گا۔اجلاس میں نائب امیر جماعت اسلامی حافظ محمد ادریس ،میاں محمد اسلم ،ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ،امیر العظیم ، عبدالغفار عزیز،حافظ ساجد انور اور سید وقاص انجم جعفری نے شرکت کی۔