معاشرے کی گھٹن علم کے چراغوں سے ختم کی جاسکتی ہے

Mohammad Ali IPA محمد علی منگل اکتوبر 16:59

پیرمحل( اْردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین-اْردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین-ا نٹرنیشنل پریس ایجنسی۔11 اکتوبر۔2016ء ) معاشرے کی گھٹن علم کے چراغوں سے ختم کی جاسکتی ہے اللہ کی جانب سے بھیجی گئی پہلی وحی سے تعلیم کی اہمیت کا اندازہ بخوبی لگا یا جاسکتا ہے معلم انسانیت کو آسمانوں سے بھیجے جانے والے پہلے پیغام کا پہلا لفظ اقراء ہی علم کی اہمیت پر دلالت کرتا ہے انسان کو اس کی ہر شے سے محروم کیا جاسکتا ہے لیکن تعلیم وہ زیور ہے جسے کوئی چھین نہیں سکتاان خیالات کا اظہار چوہدری محمد فاروق زاہد ڈپٹی ڈی ای او پیرمحل نے ہمراہ چوہدری محمد اسلم پی ایس ٹی ، چوہدری محمد علی اے ای او ،کے ہمراہ اپنے بیان میں کیا انہوں نے کہا فی زمانہ کامیابی سے آگے بڑھنے والے وہ ہی لوگ ہونگے جو بہتر تعلیم و تربیت اور علم و ہنر سے لیس ہونگے نے طلباء کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہم نصابی سرگرمیوں میں بھی حصہ لیں لیکن جو بنیادی نصاب ہے اس پر زیادہ توجہ مرکوز رکھیں تعلیم و ہنر کے ساتھ نسل نو کو بہتر صحت کی فراہمی بھی ہم سب کی ذمہ داری ہے انہوں نے کہا کہ ہمارے نبیﷺ کا فرمان ہے کہ علم حاصل کرو ماں کی گود سے لحد تک ، لہٰذا اس فرمان کی روشنی میں ہمیں چاہیے کہ ہم حصول علم اور فروغ علم کو ہر چیز پر فوقیت دیں