ڈونلڈ ٹرمپ کا صدارتی انتخاب میں روسی ہیکنگ کے معاملے پر امریکی انٹیلی جنس معلومات پر شکوک وشبہات کا اظہار

اتوار جنوری 12:30

واشنگٹن ۔ یکم جنوری (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 جنوری2017ء) امریکہ کے نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارتی انتخاب میں روسی ہیکنگ کے معاملے پر امریکی انٹیلی جنس معلومات پر شکوک وشبہات کا اظہار کیا ہے۔ امریکی میڈیا کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کے نئے متنازعہ بیان سے امریکہ میں ایک نئی بحث چھڑ سکتی ہے۔ قبل ازیں امریکہ نے صدارتی انتخاب میں ہیکنگ کے ذریعے روسی مداخلت کے معاملے پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے انٹیلی جنس اطلاعات کی بنیاد پر روس کے خلاف کئی اقدامات کا اعلان کیا تھا تاہم ڈونلڈ ٹرمپ نے فلوریڈا میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران اوباما انتظامیہ کے اس حوالے سے اقدامات پر شکوک وشبہات کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ وہ صرف یہ چاہتے ہیں کہ امریکی انتظامیہ کو یقین ہونا چاہئے کہ جو کچھ وہ کر رہے ہیں وہ صحیح ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ جو الزامات عائد کئے جارہے ہیں ان کی نوعیت سنگین ہے اور سوچ سمجھ کر حکمت عملی مرتب کرنے کی ضرورت ہے۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ہمیں یہ نہیں بھولنا چاہئے کہ ماضی میں عراق کے پاس بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کی موجودگی کا جواز بناتے ہوئے فوج کشی کی گئی حالانکہ یہ اطلاعات غلط تھیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کیلئے یہ بات ہر گز درست نہیں کہ وہ روس پر اس طرح کے الزامات عائد کرے خاص کر جب معاملہ واضح نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ ہیکنگ ایک پیچیدہ معاملہ ہے وہ اس کو سمجھ سکتے ہیں لیکن اس کی بنیاد پر جو نتائج اخذ کئے جا رہے ہیں عام لوگوں کو ان کے بارے میں پتہ نہیں ہے۔

متعلقہ عنوان :