آئندہ مالی سال کا بجٹ عوام دوست، صحت اور تعلیم کے شعبے کے لئے زیادہ سے زیادہ وسائل رکھے جائیں گے ،عائشہ غوث پاشا

این ایف سی ایوارڈ کا فیصلہ نہ ہونے کے باعث پرانے این ایف سی کے مطابق بجٹ تیار کیا جائے گا۔،صوبائی وزیر خزانہ کا سیمینار سے خطاب

پیر اپریل 20:53

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2017ء) وزیرخزانہ پنجاب ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے کہاہے کہ آئندہ مالی سال کا بجٹ عوام دوست ہو گا جس میں صحت اور تعلیم کے شعبے کے لئے زیادہ سے زیادہ وسائل رکھے جائیں گے جبکہ این ایف سی ایوارڈ کا فیصلہ نہ ہونے کے باعث پرانے این ایف سی کے مطابق بجٹ تیار کیا جائے گا۔ لاہور چیمبر میں لاہور اکنامک جرنلسٹس ایسوی ایشن کے پری بجٹ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے کہا کہ صوبہ پنجاب نے قرضوں کا بوجھ اپنی استطاعت کے مطابق اٹھایا ہے اور اس حوالے سے ناقدین کا شور شرابہ بے سود ہے۔

اس موقع پر صدر لیجا زاہد عابد نائب صدر اشرف مہتاب اور جنرل سیکرٹری شہرام الحق کے علاوہ دیگر سینئر صحافی بھی موجود تھے۔ ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو ٹیکس نیٹ میں آنا چاہئے جس سے محاصل میں اضافہ ہوگا اور بجٹ میں زیادہ وسائل دئیے جا سکیں گے جبکہ ترقیاتی منصوبوں کے لئے بھی وسائل مختص کرنے میں آسانی ہو گی۔

(جاری ہے)

عائشہ غوث پاشا کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کی طرف ہاتھ پھیلانے کی بجائے اپنے لوگوں کو ٹیکس دینے کے حوالے سے آگہی کے ساتھ ساتھ سہولیات دینا چاہیئں، اس حوالے سے لوگوں کے تحفظات کو بھی دور کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ورلڈ بینک کی رپورٹ کے مطابق وفاق کی مجموعی جی ڈی پی گروتھ میں پنجاب کا حصہ ستاون فی صد ہے۔ وفاقی محصولات میں کمی کے باعث پنجاب کے ترقیاتی بجٹ میں معمولی کٹوتیاں ہوں گی۔

ڈبل ٹیکسیشن اور اختلافی ٹیکسوں کے حوالے سے وفاق اور دیگر صوبوں سے بات چیت جاری ہے تاہم وفاق کی طرف سے پنجاب حکومت کی مشاورت کے بغیر پراپرٹی ٹیکس کی شرح میں ردوبدل سے صوبائی محاصل میں کافی مشکلات کا سامنا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اورنج لائن بیرونی سرمایہ کاری سے تیار ہو رہی ہے جس پر قرضہ کی شرح کی انتہائی کم ہے جبکہ پنجاب حکومت نے کسی دوسرے ترقیاتی منصوبے کا بجٹ میں کٹوتی کرکے اورنج لائن میں خرچ نہیں کیا۔ (قیوم زاہد)

متعلقہ عنوان :