پوپ فرانسس نے دینی شعبے کے سربراہ کو عہدے سے برخاست کر دیا

جرمن کارڈینل نے عقائد میں اصلاحات لانے کے معاملے پر پوپ کے ساتھ تلخ بحث کی تھی،ویٹی کن سٹی

اتوار جولائی 12:50

ویٹی کن سٹی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جولائی2017ء)پوپ فرانسس نے ویٹیکن میں قائم دینی شعبے کے سربراہ کارڈینل گیرہارڈ میولر کو اٴْن کے منصب سے فارغ کر دیا ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک بیان میں ویٹیکن نے کہاکہ جرمن کارڈینل نے عقائد میں اصلاحات لانے کے معاملے پر پوپ کے ساتھ تلخ بحث کی تھی۔انہتر سالہ کارڈینل گیرہارڈ لٴْڈوِگ میولر انتہائی قدامت پسندانہ عقائد کے پادری خیال کیے جاتے ہیں۔

وہ پچھلے پانچ برسوں سے رومن کیتھولک عقیدے کے مسیحیوں کے مرکز ویٹیکن میں دین اور عقیدے کے اجتماعات میں زیر بحث لائے جانے والے امور کے نگران تھے۔ اطلاعات کے مطابق پوپ فرانسس کی جانب سے رومن کیتھولک عقیدے کے بعض بنیادی معاملات میں اصلاحات پر کارڈینل میولر اپنے تحفظات کا برملا اظہار کر چکے تھے۔

(جاری ہے)

کارڈینل میولر کو اٴْن کے منصب سے فارغ کیے جانے کی وجہ ان کی پوپ کے ساتھ اصلاحاتی ایجنڈے پر ہونے والی تلخ بحث و تمحیص کو قرار دیا گیا ہے۔

پوپ نے اٴْن کو دینی شعبے کی سربراہی سے فارغ کر کے اٴْن کی جگہ ایک ہسپانوی کارڈینل کو تعینات کر دیا ہے۔ وہ ان کئی کارڈینل میں سے ایک تھے جو روایتی عقائد کو درست خیال کرتے ہوئے پوپ فرانسس کے اصلاحاتی ایجنڈے پر سوالیہ انگلیاں اٹھا چکے تھے۔جرمن کارڈینل کو پوپ سے اختلاف کے علاوہ بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے والے پادریوں کو چرچ کے ردعمل میں رکاوٹ پیدا کرنے کے مبینہ الزام کا بھی سامنا تھا۔

کہا جاتا ہے کہ بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا ارتکاب کرنے والے پادیوں کے جرائم کو عام کرنے کی راہ میں بھی اٴْن کا شعبہ مشکلات کھڑی کر رہا تھا۔ پوپ فرانسس ایسے پادریوں کو کسی قسم کا تحفظ دینے کی مخالفت کرتے ہیں۔ رواں برس مارچ میں چند کارڈینلز نے ان کے مستعفی ہونے کا مطالبہ بھی کیا تھا۔کارڈینل میولر کو اٴْن کے منصب سے فارغ کیے جانے کے اعلان میں ویٹیکن نے کہا ہے کہ اٴْن کی پانچ سالہ تعیناتی میں اضافہ نہیں کیا جائے گا اور اٴْن کی جگہ تہتر سالہ ہسپانوی پادری کارڈینل لوئیس فرانسسکو لداریا فیرر کو تعینات کر دیا گیا ہے۔ وہ رومن کیتھولک انٹرنیشنل تھیولوجیکل کمیشن کے ممبر بھی ہیں۔ انہیں سابقہ پوپ بینیڈکٹ نے سن 2008 میں کارڈینل مقرر کیا تھا۔