سیمل کامران کا دعویٰ جھوٹا ، اب تک نکاح نامہ پیش نہیں کیا، اس کے خلاف کیس عدالت میں ہیں‘ بشارت راجہ

2014ء میں نکاح کا دعویٰ کرنے والی چند ماہ پہلے تک اپنے شوہر کامران بشیر کے ساتھ رہ رہی تھی، ٹیلیفون ڈیٹا لوکیشن ثبوت ہے

پیر اگست 18:46

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 اگست2017ء)پاکستان مسلم لیگ (ق)کے سینئر رہنما محمد بشارت راجہ نے سیمل کامران کے ان کی منکوحہ ہونے کا دعویٰ کو بے بنیاد اور جھوٹ پر مبنی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اب تک چار پریس کانفرنسوں میں میڈیا کے مطالبہ کے باوجود نکاح نامہ یا نکاح کے گواہان کے نام پیش نہیں کر سکی۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ 2014ء میں میرے ساتھ نکاح کا دعویٰ کرنے والی چند ماہ پہلے تک اپنے شوہر کامران بشیر کے ساتھ رہ رہی تھی، اس دوران اس کا ٹیلیفون ڈیٹا لوکیشن اس بات کا ثبوت ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں اپنی فیملی، بیوی اور بیٹے کے ساتھ خوش و خرم زندگی گزار رہا ہوں، سیمل کامران مجھے بلیک میل کرنے کے درپے ہے، اس کے خلاف جھوٹ، بلیک میلنگ، دھوکہ دہی اور فراڈ کا مرتکب ہونے کے بابت دو درخواستیں تھانہ متعلقہ پولیس کے پاس موجود ہیں جو کہ زیر کارروائی ہیں جبکہ اس کے خلاف دو دیوانی دعوے بھی عدالت میں زیر سماعت ہیں جس پر اس کو دو لیگل نوٹس بھی دئیے جا چکے ہیں لیکن یہ مجھے اور میرے خاندان کو بدنام کرنے کے درپے ہے۔

(جاری ہے)

محمد بشارت راجہ نے کہا کہ سیمل کا موقف سچائی پر مبنی ہے تو یہ 24 گھنٹے کے اندر اندر پرنٹ میڈیا یا الیکٹرانک میڈیا میں نکاح نامہ پیش کرے تاکہ سچائی سامنے آ سکے بصورت دیگر اس کے خلاف فوجداری مقدمہ بھی درج کروایا جائے گا، اس کا پریس کانفرنسوں میں مسلسل تبدیل شدہ موقف خود اس کی باتوں کی نفی کرتا ہے۔