شام، حکومتی اور روسی جنگی طیاروں کے فضائی حملوں میں چھ جنگجو زخمی ہوئے، امریکی حمایت یافتہ فورسز کا دعوی ،،روسی فوج کی تردید

اتوار ستمبر 18:21

بیروت(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 17 ستمبر2017ء) مشرقی شام میں دولت اسلامیہ سے نبردآزما امریکہ کی پشت پناہی میں لڑنے والی فورس نے کہا ہے کہ گزشتہ روز حکومتی اور روسی جنگی طیاروں کے فضائی حملوں میں اس کے چھ جنگجو زخمی ہوئے ہیں۔یہ پہلی دفعہ ہوا ہے کہ عرب اور کرد جنگجوؤں کے اتحاد شامی جمہوریہ افواج (ایس ڈی ایف) نے کہا ہے کہ انہیں روس نے ہدف بنایا ہے۔

ایس ڈی ایف اور روس کی پشت پناہی میں شامی حکومتی افواج متوازی لیکن الگ آپریشن صوبہ دیر ایزور میں دولت اسلامیہ کے خلاف جاری رکھے ہوئے ہیں۔ایس ڈی ایف نے کہا ہے کہ 16ستمبر کو دریائے فرات کے مشرق میں ہماری افواج کو السنائیہ ایریا میں روسی اور شامی حکومت کے جنگی طیاروں نے ہدف بنایا‘‘۔دوسری جاب روسی فوج نے اس بات کی تردید کردی ہے کہ اس کے جنگی طیاروں نے شام کے مشرقی صوبہ دیرالزور میں امریکی حمایت یافتہ فورسز پر بمباری کی ہے،یہ بات اسکے ترجمان نے فرانسیسی خبررساںادارے بتائی ہے ۔

(جاری ہے)

شامی ڈیموکریٹک فورسز جنہیں واشنگٹن کی حمایت حاصل ہے ،کا قبل ازیں کہنا تھا کہ روسی اور شامی حکومت کی بمباری میں انکے جنگجو نشانہ بنے ہیں ۔شام کے ساحلی اڈے ہمیم میں فوج کے ترجمان ایگور کوناشنکوف نے کہا کہ یہ ممکن نہیں ہے ،ہم ان پر بمباری کیوں کرینگی ۔

متعلقہ عنوان :