مصباح اور یونس خان کے بعد پاکستان ٹیسٹ میں اوسط درجے کی ٹیم بن چکی ہے :وسیم اکرم

پیر جنوری 12:09

مصباح اور یونس خان کے بعد پاکستان ٹیسٹ میں اوسط درجے کی ٹیم بن چکی ہے ..
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔یکم جنوری2018ء)قومی ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم نے کہا ہے کہ مصباح اور یونس خان کے بعد پاکستان ٹیسٹ میں اوسط درجے کی ٹیم بن چکی ، ماضی کے برعکس ڈومیسٹک کرکٹ میں منصوبہ بندی دکھائی نہیں دیتی۔ایک انٹرویو میں عظیم فاسٹ باﺅلر کا کہنا تھا کہ جس طرح شاعر کو شعر کی آمد ہوتی ہے،کرکٹ آرگنائزرز بھی اسی طرح اچانک ٹورنامنٹ کرادیتے ہیں ، یہ سلسلہ بند ہونا چاہئے۔

(جاری ہے)

وسیم اکرم نے ٹیسٹ ٹیم کی کارکردگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مصباح اور یونس خان کی ریٹائر منٹ کے بعد پاکستان اوسط درجے کی ٹیسٹ ٹیم بن چکی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ایشز سیریز کا پاک بھارت سیریز سے کوئی موازنہ نہیں کیونکہ ایشز کو چار سے پانچ ملین لوگ دیکھتے ہیں لیکن پاک بھارت میچ دیکھنے کے لئے ایک ارب سے زائد انسان بے تاب ہو جاتے ہیں۔سابق کپتان نے ٹیسٹ کرکٹر عمر اکمل کو مشورہ دیتے ہوئے کہاکہ وہ میڈیا کے بجائے صرف اپنی بیٹنگ پر توجہ دیں۔