نجم سیٹھی کی تعیناتی کیخلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو 24جنوری کے لئے نوٹس جاری

جمعہ جنوری 16:41

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی کی تعیناتی کے خلاف دائر درخواست پر وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا ۔ گزشتہ روز چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے کیس کی سماعت کی ۔ درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ قوانین اور سپریم کورٹ کے احکامات کے تحت 65 برس سے زائد عمر کے کسی شخص کو کسی ادارے کا سربراہ مقرر نہیں کیا جاسکتا، حکومت نے من پسند شخص کو نوازنے کے لئے پی سی بی کا سربراہ مقرر کیا۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ نجم سیٹھی کی عمر 65 برس سے زیادہ ہونے کے باعث وہ اس عہدے کے اہل نہیں ہیں۔ درخواست میں استدعا کی گئی کہ نجم سیٹھی کے تقرر کو قواعد ضابطہ کیخلاف خلاف ہونے کی بنا پر کالعدم قرار دیتے ہوئے عہدے سے ہٹانے کا حکم دیاجائے۔پی سی بی کے وکیل تفضل رضوی نے کہا کہ وزیراعظم نے نجم سیٹھی کو قواعد وضوابط کے تحت تعینات کیا،درخواست گزار نے متعلقہ فورم سے رجوع نہیں کیا لہٰذا ناقابل سماعت قرار دی جائے ۔جس پر فاضل عدالت نے وفاقی حکومت کو 24جنوری کیلئے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments