المحمدیہ اسٹوڈنٹ سندھ کی جانب سے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے حوالے سے ہندوستانی مظالم کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی

جمعہ فروری 22:20

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 فروری2018ء) المحمدیہ اسٹوڈنٹ سندھ کی جانب سے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے حوالے سے ہندوستانی مظالم کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی جس میں سندھ کے مختلف تعلیمی اداروں کے طلباء نے کثیر تعداد میں شرکت کی اس موقع پر طلباء نے ہاتھوں میں پلے کارڈ کارڈ بینر اٹھائے ہوئے تھے جن پر کشمیری مظالم کے حوالے سے جملے تحریر تھے ،طلباء مسلسل ہندوستانی مظالم کے خلاف جذباتی انداز میں نعرے بازی کررہے تھے اور بھرپور مذمت بھی طلباء نے کشمیری شہداء کی تصاویر بھی اٹھائی ہوئی تھیں اس ریلی کا آغاز گاڑی کھاتہ چوک سے ہو ا یہ ریلی مختلف چوک چوراہوں سے ہوتی ہوئی پریس کلب پر پہنچی جہاں طلباء ذمہ داراں نے خطابات کئے۔

المحمدیہ اسٹوڈنٹ کے صوبائی ر ہنماء معاویہ راشد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیری تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں۔

(جاری ہے)

پاکستانی قوم ان کی تحریک میں شانہ بشانہ شریک ہے ۔ حکمران کشمیر کا مسئلہ عالمی سطح پر اُٹھائیں۔آزادی کشمیرکیلئے عملی اقدامات اٹھانا بہت ضروری ہے۔ بانی پاکستان نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ کہا تھامقبوضہ جموں کشمیر کی آزادی سے ہی پاکستان میں استحکام ممکن ہے۔

کشمیر و فلسطین کی آزادی اتحاد امت سے ہی ملے گی۔مسلم ملکوں کو اپنے دفاع کے لئے کھڑا ہونا چاہئے المحمدیہ اسٹو ڈنٹ یکم فیبروری سے لیکر سات فیبروری تک سندھ بھر میں ہفتہ یکجھتی کشمیر منائی گی اس سلسلے میں سندھ بھر میں سیمینار پروگرام کیئے جائیں گے کشمیریوں کے ساتھ بھر پور یکجھتی کا اظہار کیا جائے گا، تعلیمی اداروں میں اور اسکول جامعات میں کشمیر کے مسئلے کو اجاگر کیا جائیگا ۔

معاویہ راشد نے مزید کہا کہ کشمیر و فلسطین کے بچے امت مسلمہ کے بچے ہیں۔وہاں لٹتی عصمتوں کا دفاع ہمارا مقصد حیات ہے۔ افسوس کی بات ہے کہ بھارت کشمیریوں کا قتل عام کر رہا ہے اور ہمارے حکمران اسی بھارت سے دوستی کے خواہاں ہیں۔انہون نے کہا کہ المحمدیہ اسٹوڈنٹ کا پیغام ہی اُمت کا اتحاد ہے۔ ہندوستانی اشاروں پربلوچستان میں جو لوگ علیحدگی کی تحریکیں چلا رہے تھے،وہ دم توڑ چکی ہے آج جس کہ وجہ سے سبزہلالی پرچم لہرایا اور پاکستان زندہ باد کے نعرے لگنے شروع ہوگئے ہیں۔

ضلعی صدرالمحمدیہ اسٹوڈنٹ محمد عاطف نے خظاب کرتے ہوئے کہا دشمنوں کی مذموم سازشیں ناکام بنائیں گے ۔ طلباء کانفرنسوں سیمنار کے انعقاد کروانے کا مقصدملک کو اندرونی طور پرمتحد اور مضبوط کرنا ہے اور طلباء نظریہ پاکستان پر جمع کرنا ہے ۔ سندھ بھر میں ہم نے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لئے بڑے لیول پر پرو گرام ترتیب دیئے ہیں ، تعلیمی اداروں میں اس کے علاوہ شہروں کے چوک چورہاہوں پر ملٹی میڈیا پروجیکٹر کے ذریعی ہندوستانی کشمیریوں کے اوپر کیئے گئے مظالم دکھائیں گے تاکہ سندھ بھر کی عوام کے سامنے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا جائے ، المحمدیہ اسٹوڈنٹ سندھ کے طلباء میں شعور اجاگر کرے گی ، آج مسلم دنیا پاکستان کے کردار کو تسلیم کر تی ہے اور اس کی وجہ صرف اورصرف نظریہ لاالہ اللہ ہے ۔

اسی نظریے پر ہم نے ملک حاصل کیا اور پاکستان سے دشمنی کی وجہ بھی یہی ہے، دیگر طلباء نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج ہمیں دنیا میں کشمیر یوں کی وکالت کرنی ہے ۔ امریکہ افغانستان میں انڈیا کو کلیدی کردار دے کر اپنی شکست کا بدلہ لینا چاہتا ہے ، حکمرانوں کو یہ بات سمجھنی چاہیے ۔ مسلم علاقوں میں مسلمانوں کو خون میں نہلایا جا رہا ہے۔ہمارا پیغام ہے کہ ذاتی لڑائیاں،فرقہ بندی چھوڑ کر اللہ کے دین کے لئے سب ایک ہو جائو۔بیت المقدس کے تحفظ،لٹتی عزتوں کو بچانے کے لئے میدان میں نکلنے کی ضرورت ہے۔پاکستان کا استحکام اتحاد سے ہی ممکن ہے۔اختتام پر طلبہ نے ہندوستانی مظالم کے خلاف بھر پور نعرے بازی اور ہندوستانی مظالم کی بھر مذمت کی۔

متعلقہ عنوان :