اوکاڑہ میں ویڈیو سکینڈل میں گرفتار مرکزی ملزم کا جسمانی ریمانڈ، شرمناک ترین انکشافات کر ڈالے

ملزم فحش فلمیں دکھا کر نہ صرف کمسن بچوں سے زیادتی کرتا بلکہ انہیں آپس میں بھی زیادتی کرنے پر مجبور کرتا،بچوں کی ویڈیوز بنا کر انکی ماوں بہنوں کو بلیک میل کر کے زیادتی کا نشانہ بناتا

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس ہفتہ فروری 20:00

اوکاڑہ میں ویڈیو سکینڈل میں گرفتار مرکزی ملزم کا جسمانی ریمانڈ، شرمناک ..
اوکاڑہ(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار - 17فروری 2018ء ): اوکاڑہ کے علاقے حجرہ شاہ مقیم میں ویڈیو سکینڈل میں گرفتار مرکزی ملزم حافظ محمد یوسف کا جسمانی ریمانڈ لیا گیا ،ریمانڈ کے دوران ملزم نے شرمناک ترین انکشافات کر ڈالے۔ملزم نے بتایا کہ میں فحش فلمیں دکھا کر نہ صرف کمسن بچوں سے زیادتی کرتا بلکہ انہیں آپس میں بھی زیادتی کرنے پر مجبور کرتا،بچوں کی ویڈیوز بنا کر انکی ماوں بہنوں کو بلیک میل کر کے زیادتی کا نشانہ بناتا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ دنوں پولیس نے اہل علاقہ کی شکایت پر نجی اکیڈمی چلانے والے حافظ محمد یوسف کو زیادتی کے بعد ویڈیو بنانے اور انکی ویڈیو بنانے کے الزام میں گرفتار کیا۔پولیس نے ملزم کا جسمانی ریمانڈ حاصل کیا تو ملزم نے ریمانڈ کے دوران شرمنا ترین انکشافات کرڈالے۔

(جاری ہے)

پولیس کے مطابق گرفتار ملزم سے برآمد ہونیوالے 50 سے زائد ویڈیو کلپس میں وہ سکول کے طلباء و طالبات کی آپس میں زیادتی کرواتا اور خود بھی ان سے زیادتی کرتا دکھائی دیا۔

پولیس نے بتایا کہ ملزم 10 سال سے سکول کی آڑ میں فحش اور گھنائونے دھندے میں ملوث ہے اور اب تک لاتعداد لڑکے، لڑکیوں کو اپنی ہوس اور درندگی کا نشانہ بنا چکا ہے۔ ایس ایچ او کے مطابق ملزم حافظ یوسف نے سکول کے دفتر نما ڈرائنگ روم کو اپنی کمین گاہ بنا رکھا تھا۔ وہ طلبہ اور طالبات کو اس کمرے میں بلاکر پہلے انہیں غیراخلاقی فلمیں دکھاتا اور پھر انہیں ایک دوسرے کے ساتھ زیادتی کرنے پرمجبور کرتا اور اس دوران انکی خفیہ کیمرے کے ذریعے شرمناک ویڈیو فلم بنالیتا جو کہ بعد میں ان بچوں کو بلیک میل کرکے انہیں اپنی ہوس کا نشانہ بناتا۔

ملزم محض اسی پر اکتفا نہیںکرتا بلکہ وہ ان ویڈیو فلموں سے زیادتی کا شکار لڑکے، لڑکیوں کی مائوں اور بہنوں کو بھی اپنی تیار کردہ فلمیں دکھا کر بلیک میل کر کے زیادتی کرتا۔