نواز شریف کی موروثی سیاست عمران خان کی عروسی سیاست پر حاوی ہو رہی ہے

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعرات فروری 14:54

نواز شریف کی موروثی سیاست عمران خان کی عروسی سیاست پر حاوی ہو رہی ہے
لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔22فروری 2018ء) معروف صحافی حامد میر کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی موروثی سیاست عمران خان کی عروسی سیاست پر حاوی ہو رہی ہے۔تفصیلات کے مطابق معروف صحافی و کالم نگار حامد میر نے  نواز شریف کی سیاست کو موروثی سیاست ،،عمران خان کی سیاست کو عروسی سیاست جبکہ آصف علی زرداری کی سیاست کو جاسوسی سیاست قرار دیا۔اپنے ایک کالم ’’مورثی سیاست با مقابلہ عروسی سیاست ‘‘ میں حامد میر لکھتے ہیں کہ نواز شریف کی موروثی سیاست عمران خان کی عروسی سیاست پر حاوی ہو رہی ہے لیکن ان دونوں کی مقابلے بازی میں اصول پسندی کے کئی دعوے قربان کئے جا چکے ہیں۔

نواز شریف کی موروثی اور عمران خان کی عروسی سیاست کے مقابلے پر آصف علی زرداری نے جاسوسی سیاست متعارف کروائی ہے جس کا عملی مظاہرہ انہوں نے بلوچستان میں کیا جہاں خاموشی کے ساتھ جوڑ توڑ کے ذریعہ نواب ثناء اللہ زہری کی حکومت کو فارغ کروا دیا گیا لیکن اس جاسوسی سیاست کی کامیابی سے بلوچستان کے عام لوگوں کو کیا فائدہ ہوا؟ ہو سکتا ہے کہ نواز شریف کی ’’زلف‘‘ کے اسیر بہت زیادہ بُرا منا جائیں نواز شریف کی موروثی سیاست عمران خان کی عروسی سیاست پر حاوی ہو گئی ہے۔

(جاری ہے)

عمران خان نے اپنے کچھ دوستوں کو یقین دلایا ہے کہ گھبرائو نہیں میں کچھ ہی دنوں میں نواز شریف کی موروثی سیاست اور آصف علی زرداری کی جاسوسی سیاست کو ایک ہی سکے کے دو رُخ ثابت کر دوں گا۔ ویسے عمران خان کو کچھ کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ نواز شریف اور آصف علی زرداری خود ہی کوئی ایسا کام کر جاتے ہیں جس کے بعد لوگ مجبوری میں ایک دفعہ پھر عمران خان کی طرف دیکھنے لگتے ہیں اور بے بسی سے کہتے ہیں یہ صرف غلط وقت پر شادی ہی تو کرتا ہے کم از کم ججوں اور جرنیلوں کو ٹکریں تو نہیں مارتا اور اینٹ سے اینٹ بجانے کی دھمکی تو نہیں دیتا۔