بلوچستان میں حکومت کی تبدیلی جمہوری عمل تھا، میر سرفرا ز بگٹی

عدالتی فیصلے کے بعد سینیٹ انتخابات میں دی جانیوالی ٹکٹوں سے متعلق رائے قانونی ماہرین دے سکتے ہیں، منشیات کے عادی افراد کی بحالی معاشرتی بہبود کا روشن پہلو ہے ،صوبائی وزیر داخلہ

جمعرات فروری 19:27

بلوچستان میں حکومت کی تبدیلی جمہوری عمل تھا، میر سرفرا ز بگٹی
کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 فروری2018ء) صوبائی وزیر داخلہ میر سرفرا زبگٹی نے کہاہے کہ بلوچستان میں حکومت کی تبدیلی جمہوری عمل تھا عدالتی فیصلے کے بعد سینیٹ انتخابات میں دی جانیوالی ٹکٹوں سے متعلق رائے قانونی ماہرین دے سکتے ہیں میری خواہش ہے کہ سینیٹ انتخابات وقت پر ہوں اسمبلی اپنی مدت پوری کررہی ہے ہم پر جمہوریت کو سبوتاژ کرنے کے الزامات لگانے والوں کو کچھ حاصل نہیں ہوا ۔

یہ بات انہوں نے جمعرات کو غیر سرکاری سماجی ادارے انسانیت بچائو کے زیر اہتمام منشیات کے عادی920 افراد کی بحالی کے حوالے سے منعقدہ تقریب اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہی ۔انہوں نے کہاکہ منشیات کے عادی افراد کی بحالی معاشرتی بہبود کا روشن پہلو ہے ، منشیات معاشرتی ناسور ہے جو نوجوان نسل کو ناکارہ بنا کر انہیں معاشرے کا کارآمد شہری کے بجائے بوجھ بنا دیتی ہے۔

(جاری ہے)

وزیر داخلہ نے کہاکہ ہم اپنی نوجوان نسل کو تباہ نہیں ہونے دیں گے انسانیت بچاؤ جیسی دیگر تنظیموں کو بھی اس کار خیر میں آگے آنا چاہئے منشیات سے چھٹکارا پانے والے افراد ملک وقوم کی ترقی اور نوجوانوں کی مثبت رہنمائی کا فریضہ سرانجام دیکر منشیات کے انسداد کا پختہ عزم کریں مشکلات کے باوجود منشیات کے عادی افراد کی بحالی کا پروگرام خوش آئند ہے۔ میر سرفراز بگٹی نے کہاکہ منشیات سے بحال افراد کو وزارت داخلہ سمیت دیگر محکموں میں میرٹ پر ملازمت دے کر ان کی حوصلہ افزائی کریں گے ،،منشیات کے انسداد کے لئے کام کرنے والے اداروں کو تحفظ فراہم کیا جائے گا

متعلقہ عنوان :