سپریم کورٹ نے احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں مزید تین سال توسیع سے متعلق ازخود کیس نمٹا دیا

ہفتہ مارچ 23:10

لاہور۔10 مارچ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مارچ2018ء) سپریم کورٹ نے احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں مزید تین سال توسیع سے متعلق ازخود کیس نمٹا دیا۔ سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس آف پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے از خود کیس کی سماعت کی۔عدالت کے روبروسرکاری وکیل نے جج کی مدت ملازمت میں توسیع کے نوٹیفیکشن کی کاپی عدالت میں پیش کر دی۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت 13 مارچ کو پوری ہورہی ہے۔ سپریم کورٹ نے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں توسیع نہ کرنے کا نوٹس لیا تھا سپریم کورٹ نے شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کرنے والے احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں مزید تین سال توسیع ہونے پراز خود کیس نمٹا دیا۔

(جاری ہے)

وفاقی حکومت کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کرنے والے احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں توسیع کر دی گئی ہے،،سرکاری وکیل نے نوٹیفیکشن کی کاپی عدالت میں پیش کر دی،،،جس پر چیف جسٹس نے از خود کیس نمٹا دیا،،احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت 13 مارچ کو پوری ہورہی ہے اور پاناما کیس کے فیصلے کی روشنی میں انہیں 6 ماہ کے اندر شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنسز کا ٹرائل مکمل کرنا ہے جس کی ڈیڈ لائن بھی 13 مارچ ہی ہے،،سپریم کورٹ نے جج محمد بشیر کی مدت ملازمت میں توسیع نہ کرنے کا نوٹس لیا تھا اور سیکرٹری قانون کو طلب کرتے ہوئے جواب مانگا تھا۔

متعلقہ عنوان :