نئے چیئرمین سینیٹ کے قائم مقام صدر بننے سے متعلق عمر کی حد پر بحث چھڑ گئی

Mian Nadeem میاں محمد ندیم منگل مارچ 11:43

نئے چیئرمین سینیٹ کے قائم مقام صدر بننے سے متعلق عمر کی حد پر بحث چھڑ ..
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔ 13 مارچ۔2018ء) نئے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کے بطورقائم مقام صدر بننے سے متعلق عمر کی حد پر بحث چھڑ گئی ہے۔آئین کے آرٹیکل 41 کے تحت صدر مملکت کے عہدے کے لئے کسی بھی شخص کی کم سے کم عمر45 سال ہونی چاہیے، نومنتخب چیئرمین سینٹ کے کاغذات نامزدگی میں تاریخ پیدائش 14 اپریل 1978 درج ہے۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق قائم مقام صدر بننے کے لیے صادق سنجرانی کی پانچ سال کم ہے،آئینی ماہرین کی نظر میں سپریم کورٹ کے حالیہ فیصلوں کی روشنی میں صدر مملکت کے لیے آئین میں متعین عمر کی حد کا اطلاق قائم مقام صدر پر بھی ہوتا ہے۔ذرائع کاکہناہے کہ نوازشریف کی بطور پارٹی صدر نااہلی کیس میں بھی سپریم کورٹ واضح کرچکی ہے کہ نااہلی کے بعد کوئی بھی شخص پارٹی کے امور متبادل عہدے سے نہیں چلاسکتا۔

اسی طرح اعلیٰ عدلیہ کے از خود نوٹس کے تحت چیئرمین نیب کی عدم موجودگی میں ڈپٹی چیئرمین کو بھی اسی عمر اوراہلیت کا لازم قرار دیا گیا ہے۔ادھر اپوزیشن کا کہنا ہے کہ قائم مقام صدر کے لئے چیئرمین سینیٹ ایکس آفیشو ممبر کے طور پر عہدہ سنبھالتا ہے، لہٰذا صدر مملکت کے عہدے سے متعلق قواعد وضوابط چیئرمین سینیٹ پر لاگو نہیں ہوتے۔

متعلقہ عنوان :