امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کی پہلی خاتون سربراہ‘ جینا ہیسپل متشدد سوچ کی حامل افسرسمجھی جاتی ہیں-رپورٹ

Mian Nadeem میاں محمد ندیم بدھ مارچ 14:00

امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کی پہلی خاتون سربراہ‘ جینا ہیسپل متشدد ..
واشنگٹن(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔ 14 مارچ۔2018ء) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کی سربراہی کے لیے انٹیلی جنس افسر جینا ہیسپل کو نامزد کردیا ہے وہ اس عہدے پر براجمان ہونے والی پہلی خاتون ہوں گی۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کو ان کے عہدے سے برطرف کر کے ان کی جگہ سی آئی اے کے سربراہ مائیک پومپی کو وزیر خارجہ جبکہ مائیک پومپی کی جگہ ان کی نائب جینا ہیسپل کو سی آئی اے کی نئی سربراہ نامزد کردیا گیا۔

وہ اس عہدے کے لیے نامزد کی جانے والی پہلی خاتون ہیں۔جینا ہیسپل گزشتہ 30 برس سے سی آئی اے سے وابستہ ہیں۔ 61 سالہ جینا ہیسپل کا بیرون ملک کام کرنے کا وسیع تجربہ ہے اور وہ کئی اہم ممالک میں سی آئی اے کی اسٹیشن چیف رہ چکی ہیں۔

(جاری ہے)

جینا کی بطور سی آئی اے سربراہ کی تعیناتی سینیٹ کی منظوری سے مشروط ہے۔ امکان ہے کہ ٹرمپ کی مخالف پارٹی ڈیموکریٹس کے تمام ارکان سینیٹ میں ان کی تعیناتی کے خلاف فیصلہ دے دیں جس کے بعد صدر ٹرمپ کو نیا سربراہ نامزد کرنا ہوگا۔

جینا ہیسپل پر تھائی لینڈ میں سی آئی اے کی ایک خفیہ جیل اور اس میں قیدیوں پر لرزہ خیز مظالم کے حوالے سے کافی تنقید بھی کی جاتی ہے۔تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ ممکن ہے کہ سینیٹ میں صدر ٹرمپ کی پارٹی ری پبلکنز کے کئی ارکان بھی صدر ٹرمپ کے اس فیصلے کی مخالفت کریں۔