گاجرکا رس معدے کے سرطان اور لیوکیمیا سے بچاسکتاہے،ماہرین صحت

بدھ اپریل 11:02

قصور۔18 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء)برطانوی ماہرین صحت نے کہاہے کہ گاجر کے رس کے استعمال سے معدے‘ چھاتی کے سرطان‘ پھیپھڑوں کے امراض اور خونکی کمی کے مرض لیوکیمیا بچا سکتا ہے۔

(جاری ہے)

یونیورسی آف لیڈزکے شعبہ صحت کے ماہرین کی جدیدتحقیق سے معلوم ہواہے کہ گاجرکا جوس معدے کے کینسر کودوررکھنے میں مددگارہوتاہے ،اگرمسلسل گاجر کھائی جائے تو معدے کے سرطان کے امکانات 26فیصد تک کم ہوجاتے ہیں‘گاجر میں موجودکیروٹینوئیڈز چھاتی کے کینسرکو دوبارہ حملہ کرنے سے روکتی ہیں ‘خون میں کیروٹینوئیڈزکی مقدارجتنی زیادہ ہوگی بریسٹ کینسرکے لوٹنے کا خطرہ اتنا ہی کم ہوجاتاہے‘گاجر کا جوس وٹامن سی سے بھرپورہوتاہے اور یہ سانس کے ایک مرض کرونک اوبسٹر کٹیوپلمونری ڈیزیز کی شدت کم کرتاہے۔