پشاورپولیس نے تباہی پھیلانے کا منصوبہ ناکام بنا دیا،بھاری اسلحہ وگولہ بارودبرآمد

بدھ اپریل 16:10

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) پشاورپولیس نے دہشتگردوں کی جانب سے پشاور میں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے کا منصوبہ ناکام بنا دیا جبکہ دہشتگردی میں استعمال ہونے والے اینٹی ٹینک مائن بم ،ْ راکٹ لانچر ،ْ مارٹر گولے ،ْٹیل ار پی جی سیون ،ْ ڈیٹو نیٹر ،ْ راکٹ لانچر گولے اورخود کش جیکٹ میں استعمال ہونے والے دیگر بارودی مواد برآمد کرکے واقعہ میں ملوث دہشتگر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا جبکہ مزید تفتیش جار ی ہے۔

تفصیلات کے مطابق افسران بالا کو خفیہ زرائع سے اطلاع ملی تھی کہ پشاورمیں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے کی غرض سے تھانہ ریگی کی حدود میں کسی نامعلوم مقام پر دہشتگردوں عبداللہ اورممتاز نے خطرناک بارودی مواد زیر زمین چھپا رکھا ہے اس اطلاع پر ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال نے فوری ایکشن لیتے ہوئے ایس پی رورل شفیع اللہ گنڈا پور کی نگرانی میں ڈی ایس پی ریگی رحیم حسین ،ْ ایس ایچ او ریگی عمران الدین خان بمعہ دیگر پولیس نفری پر مشتمل ٹیم تشکیل دی جنہوں نے پیشہ ورانہ مہارت سے ریگی کے علاقہ محلہ غزالی گڑھی میں واقع ایک مکان پر چھاپہ مارا مکان میں مطلوبہ ملزمان موجود نہیں تھے البتہ مکان ہذا میں چیکنگ کرتے ہوئے صحن میں مختلف جگہوں کی کھدائی کی گئی اس دوران زمین کے اندر پلاسٹک کے ڈرموں میں چھپائے گئے خطرناک قسم کا بارودی مواد اوراسلحہ برآمد کرلیا جوکہ دہشتگردوں نے پشاورمیں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے کیلئے مکان کے صحن میں دفنا رکھا تھا برآمد کیے جانے والے بارودی مواد میں تین عدداینٹی ٹینک بھاری مائینز(بم ) ،ْایک عدد راکٹ لانچر ،ْ تین عدد راکٹ لانچر گولے ،ْ7 عدد 81MM مارٹر ز گولے ،ْ 9 عدد ٹیل RPG-7 ،ْ 100 عددالیکٹرک ڈیٹو نیٹر ز ،ْ18 عدد ٹائم پنسل ،ْ خود کش جیکٹ میں استعمال ہونے والے تین عدد لیڈپیسز ،ْ10 عددایگنیٹر سیٹ برائے بارودی ہینڈ گرنیڈ شامل ہیں پولیس نے دونوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفیش شروع کردی ہے پولیس کی جانب سے کی جانیوالی بروقت کاروائی سے پشاوربڑی تباہی سے بچ گیا ۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ ملزمان عبداللہ ولد ممتاز اور ممتاز ولد امین اللہ ساکنان غزالی گڑھی دہشت گردی ،ْ قتل اقدام قتل اوردرجنوں دیگر سنگین مقدمات میں بھی پشاورپولیس کو مطلوب ہیں ۔

متعلقہ عنوان :