فلسطینی طلباء کی ریلی پر صہیونی فوج کی فائرنگ، 84 طلباء وطالبات شدید زخمی ہوگئے، سات کی حالت تشویشناک

بدھ اپریل 17:50

غزہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی مشرقی سرحد کے قریب فلسطینی طلباء کی ریلی پر قابض صہیونی فوج جانب سے براہ راست فائرنگ کے نتیجے میں کم سے کم 84 طلباء اور طالبات شدید زخمی ہوگئے۔ غزہ میں وزارت تعلیم کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ تین ہفتوں کے دوران غزہ کی مشرقی سرحد پر ہونیوالی احتجاجی ریلیوں کے دوران سینکڑوں فلسطینی طلباء زخمی ہوچکے ہیں۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز نکالی گئی جس میں سینکڑوں طلباء نے حصہ لیا۔ اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 84 طلباء زخمی ہوگئے۔ ان میں سے سات کی حالت خطرے میں بیان کی جاتی ہے۔ 57 طلباء کو درمیانے درجے کے زخم آئے ہیں۔وزارت تعلیم اور محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کی طرف سے فلسطینی طلباء پر سیدھی گولیاں چلائی گئی اوران پر آنسوگیس کی شیلنگ کی گئی۔ فائرنگ سے کئی طلبا کے پیٹ اور جسم کے بالائی حصوں پر گولیاں لگی ہیں۔ بعض طلباء کی گردنوں پر بھی گولیاں لگیں جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی بتائے جاتے ہیں۔