لنڈیکوتل میں چھٹی جماعت کاطالبعلم سیلابی ریلے کی نذرہوگیا،لاش برآمد

بدھ اپریل 22:02

لنڈیکوتل۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) خیبر ایجنسی لنڈیکوتل میں طوفانی بارش کی وجہ سے علاقہ چنگئی،دس سالہ، چھٹی جماعت کا طالب علم سیلابی ریلے کی نذر ہو گیا ۔لاش پڑانگ سم چیک پوسٹ کے قریب نکالی گئی ۔گاوں پہنچنے پر کہرام مچ گئی ۔

(جاری ہے)

تفصیلا ت کے مطابق خیبر ایجنسی کی تحصیل لنڈ یکو تل میں گزشتہ روز جاری ہونے والی طوفانی بارش سے بڑا سیلابی ریلہ نکل آیا جس نے خیبر چنگئی خیل میں دس سالہ ،چھٹی جماعت کا طالب علم حاجی اکبر ولد اکبر حسین کو اپنے ساتھ بہا لے گیا دوسرے بھائی نے دیکھ کر گھر میں اطلا ع دی سیلابی ریلے نے بچے کو کچھ فاصلے پر بہا کے لے گیا تھا کہ تحصیل جمرود کے پڑانگ سم چیک پوسٹ کے قریب مقامی لوگوں اور خاصہ دار فورس کے اہلکاروں نے ریسکیو کام میں بچے کی لا ش نکال لی سیلاب کم ہونے کے بعد بچے کی لا ش گاوں پہنچا دی گئی لاش پہنچتے ہی پورے گاوں میں کہرام مچ گئی جبکہ لنڈیکوتل خیبر چنگی خیل میں سیلابی ریلے کی وجہ سے پاک افغان شاہر پانچ گھنٹوں تک بند ری جس کی وجہ سے دونوں اطراف سینکڑوں گاڑیا پھنس گئے اور بعد میں اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ نیاز محمد اور تحصیلدار شمس السلام نے لیویز اور خاصہ دار فورس کے ہمراہ بھاری مشینری کے زریعے امدادی کاروائی شروع کرتے ہوئے پاک افغان شاہراہ کو ہرقسم ٹریفک کے لئے کھول دیا گیا سیلابی ریلی کی وجہ سے دونوں اطراف سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا علاقے کے ٹرانسپورٹروں نے پاک افغان شاہراہ پل پر تعمیراتی کام شروع کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ سیلابی ریلے میں ٹرانسپورٹرز کو درپیش مشکلات میں کمی اجائے ۔