بھارتی شخص نے اپنی ہی بیٹی دوستوں کو ''تحفے'' میں دے دی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعہ اپریل 16:39

بھارتی شخص نے اپنی ہی بیٹی دوستوں کو ''تحفے'' میں دے دی
لکھنؤ(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 20 اپریل 2018ء) : بھارت میں ایک سفاک باپ نے اپنی ہی بیٹی کو دوستوں کو ''تحفے'' میں دے دیا جنہوں نے بے دردی سے اس بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی شخص اپنی 35 سالہ بیٹی کو ایک میلے میں لے کر گیا جہاں اسے اپنے دوستوں سے ملوایا، ان دوستوں میں مجرمانہ ریکارڈ رکھنے والا مان سنگھ بھی شامل تھا۔

لکھنؤ میں موجود مراج نامی شخص کے گھر میں باپ سمیت تمام دوستوں نے خاتون کو موٹر سائیکل پر ایک اور دوست کے پیچھے بیٹھنے کا کہا۔ 35 سالہ خاتون کو میراج کے گھر پر ہی باپ نے دوستوں کے حوالے کیا جہاں باپ نے دوستوں سمیت اپنی ہی بیٹی سے اجتماعی زیادتی کی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد 35 سالہ خاتون کو اگلے 18 گھنٹوں کے لیے ایک جگہ بند کر دیا گیا جہاں سے وہ ایک دن فرار کر اپنی ماں کے گھر پہنچنے میں کامیاب ہو گئی۔

(جاری ہے)

مقامی پولیس نے خاتون کی شکایت پر ایک ایف آئی آر درج کر لی ہے، میراج نامی شخص پولیس کی حراست میں جبکہ مان سنگھ اور لڑکی کا باپ مفرور ہیں۔ پولیس نے بتایاکہ میراج کی عمر لگ بھگ 40 سال ہے، اس کا دعویٰ ہے کہ وہ میڈیکل کے شعبے سے وابستہ ہے لیکن اس کے پاس میڈیکل کی ایک بھی ڈگری موجود نہیں ہے۔ پولیس نے مزید بتایاکہ متاثرہ خاتون 16 سال قبل شادی ہوئی لیکن شادی کے دو سال بعد خاوند سے جھگڑا ہونے پر واپس میکے آ گئی تھی ۔

ایس پی سیتا پور پولیس نے بتایا کہ نومبر 2017ء میں لڑکی کے والد کو بیٹی سے ناجائز رشتہ ہونے کی بنا پر گاؤں سے بے دخل کر دیا گیا تھا، ایک پنچائت بلوا کر والد کو جیل بھی بھجوایاگیا جہاں سے وہ رواں برس فروری میں رہا ہوا۔ اس واقعہ کے بعد 35 سالہ بیٹی نے اپنے 14 سالہ بچے کے ساتھ الگ سے رہنا شروع کر دیا تھا۔