اداروں کو مزید فعال اور با اختیارکرنا اور بلدیاتی اداروں کی معطلی شفاف انتخابات کی طرف اہم قدم ہوگا، کنور محمد دلشاد

جمعہ اپریل 19:18

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) سابق وفاقی سیکرٹری الیکشن کمیشن آف پاکستان و چیئرمین نیشنل ڈیمو کریٹک فائونڈیشن کنور محمد دلشاد نے کہا ہے کہ اداروں کو مزید فعال اور بااختیارکیا جائے، آئندہ انتخابات کی شفافیت کو برقرار رکھنے کے لئے ملک بھر کے بلدیاتی اداروں کو وقتی طور پر معطل کرنا ملک کے مفاد میں ہے کیونکہ ملک بھر میں 10,994مقامی حکومتیں، 3500سے زائد سر براہان اور مخصوص نشستوں پر ان ڈائریکٹ منتخب نمائندگان متحرک ہیں اور یہ ادارے سیاسی جماعتوں کے اثر میں ہیں لہذا انتخابی شیڈول جاری کرتے ہوئے ان کی معطلی کے احکامات بھی جاری کرنا شفاف انتخابات کی طرف اہم قدم ہوگا۔

وہ جمعہ کو آئندہ انتخابات اور چیلنجز کے موضو ع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کر رہے تھے ۔

(جاری ہے)

کنور محمد دلشاد نے تجویز پیش کی کہ کاغذات نامزدگی کی منظوری قومی احتساب بیورو ، سٹیٹ بینک آف پاکستان اور ایف بی آر سے مشروط کر دی جائے تاکہ جو امید وار نا دہندگان ہیں یا جن کو بینکوں نے دیوالیہ قرار دیا ہوا ہے ان کو انتخابی عمل سے دور رکھا جائے ۔

سیمینار میں سول سوسائٹی،، وکلاء،اساتذہ،صحافی برادری سمیت زندگی کے دیگر تمام شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے افراد نے بھی شرکت کی۔اس موقع پر نیشنل ڈیمو کریٹک فائونڈیشن کے صدر سدرن شیخ راشد عالم نے کہا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان ایک غیر جانبدار ادارہ ہے ۔انہوں نے تجویز پیش کی کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان از سر نو ضابطہ اخلاق کو مرتب کرتے ہوئے تمام پارلیمانی سیاسی جماعتوں کا اعتماد حاصل کر ے اور موجودہ ضابطہ اخلاق میں جو ابہام ہے اس کے ازالے کے لئے عملی اقدامات اٹھائے۔

صدر نیشنل ڈیمو کریٹک فائونڈیشن سسہیل کسٹ نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں میڈیا کا کردار انتہائی اہم ہوگا ،میڈیا انتخابات میں شفافیت پر گہری نظر رکھے گا۔انہوں نے کہا کہ عوام کی راہنمائی کے لئے الیکشن کے معاملات سے آگاہی مہم چلانا ہوگی۔