یوکرین کے سفیر کا دورہ ایچ ای سی ،ایگزیکٹیو ڈائریکٹر سے ملاقات ،

باہمی تعلیمی تعاون پر گفتگو ایچ ای سی ملک میں اعلٰی تعلیم اور تحقیقی کلچر کے فروغ کے لئے پُر عزم ہے اور ملک کو علم پر مبنی معیشت بنانے کے حوالے سے اپنا کردار بھرپور طریقے سے ادا کر رہا ہے، ڈاکٹر ارشد علی

جمعہ اپریل 19:44

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) پاکستان میں یوکرین کے سفیر ولودیمیر لاکوموو نے اعلٰی تعلیمی کمیشن (ایچ ای سی)سیکرٹریٹ کا دورہ کیا اور ایچ ای سی کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ڈاکٹر ارشد علی سے ملاقات کی۔ ملاقات میں اعلٰی تعلیمی شعبے سے متعلق باہمی تعاون کے امور زیر غور آئے۔ ٓٓاس موقع پر ڈاکٹر ارشد علی نے پاکستان اور یوکرین کے مابین دوطرفہ تعلیمی تعاون کے فروغ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ایچ ای سی دیگر ممالک کے ساتھ تعاون کو بہت قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے ۔

انہوں نے ایچ ای سی کے فعال کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ایچ ای سی ملک میں اعلٰی تعلیم اور تحقیقی کلچر کے فروغ کے لئے پُر عزم ہے اور ملک کو علم پر مبنی معیشت بنانے کے حوالے سے اپنا کردار بھرپور طریقے سے ادا کر رہا ہے۔

(جاری ہے)

سفیر نے پاکستان میں اعلٰی تعلیم کے فروغ کے لئے ایچ ای سی کی کاوشوں کو سراہا اور اعلٰی تعلیم کے ذریعے دونوں ممالک کے تعلقات میں بہتری پر زور دیا۔

انہوں نے اس موقع پر پاکستانی جامعات بالخصوص نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی کی کارکردگی کی بھی تعریف کی۔ ملاقات میں یوکرین کی طرف سے ماہرین تعلیم کے ایک وفد کی پاکستان آمد کے حوالے سے بھی گفتگو ہوئی۔ وفد اپریل کے آخر میں پاکستان آنے کا امکان ہے اور اپنے دورے کے دوران وفد نیشنل یونیورسٹی آف ماڈرن لینگوجز (نمل)کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر بھی دستخط کرے گا۔ متوقع معاہدے کی رو سے نمل اور کیو نیشنل لنگوسٹک یونیورسٹی لسانی، ثقافتی اور سائنسی تعاون کو فروغ دیں گے اور باہمی دلچسپی کے شعبہ جات میں تدریس اور تحقیق کو فروغ دیں گے۔ دونوں جامعات مختلف شعبہ جات کا تعین بھی کریں گے جن میں دونوں جانب سے تعاون کو ترویج دی جاسکے۔