سرگودھا، جناح آبادی سکیم کی آڑ میں جعلی دستاویزات کے ذریعے سرکاری رقبوں کی فروخت کا انکشاف، ڈپٹی کمشنر کو چھان بین کا ٹاسک دیدیا گیا

جمعہ اپریل 22:48

سرگودھا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) شہر کے اطراف اہم چوراہوں کے نذدیک ترین علاقوں میں جناح آبادی سکیم کی آڑ میں جعلی دستاویزات کے ذریعے سرکاری رقبوں کی فروخت کا انکشاف ہوا ہے جس پر ڈپٹی کمشنر کو چھان بین کا ٹاسک دیدیا گیا،ذرائع کے مطابق پٹیشن سیل کو موصول سورس رپورٹ میں 39شمالی چوک،33شمالی، سلانوالی روڈ، شاہین آباد روڈ سمیت مختلف مقامات کی نشاندہی کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ سرکاری رقبہ جات کو جناح آبادی سکیم ڈکلیئر کر کے ان پر غیر قانونی قبضے کروائے گئے ،جس میں محکمہ مال کے افسران و ملازمین یہاں تک کہ اعلی شخصیات کے ڈرائیورز اور عملے نے بھی بہتی گنگا میں خوب ہاتھ دھوئے، الاٹ منٹ کے نام پر تحصیلداروں،نائب تحصیلداروں اور پٹواریوں کی مبینہ آشیر باد سے جعلی دستاویزات تیار کر کے پلاٹوں کو آگے فروخت کرنے کا سلسلہ بھی جاری ہے ،اور حکومتی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچایا جا رہا ہے ، جس پر ڈائریکٹر پٹیشن سیل نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر کو ہدایت کی ہے کہ وہ معاملے کی چھان بین کر کے ذمہ دار افسران و ملازمین کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائیں، اور سرکاری رقبے واگزار کورائے جائیں۔

متعلقہ عنوان :