فیصل آباد،محکمہ زراعت پنجاب نے کپاس کی منظور شدہ اقسام کی کاشت کاشیڈول جاری کردیا

ہفتہ اپریل 17:40

فیصل آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) محکمہ زراعت پنجاب نے کپاس کی منظور شدہ اقسام کی کاشت کاشیڈول جاری کردیا اور ہدایت کی گئی ہے کہ کاشتکار کپاس کی کاشت کیلئے صرف منظور شدہ اقسام کا بیج استعمال کریں،نامنظور شدہ اور غیر قانونی بیج کے استعمال سے کپاس کی پیداوار میں نمایاں کمی ہو جاتی ہے۔کاشتکار کپاس کی بی ٹی اقسام کی کاشت مئی تک مکمل کر یں اس کے علاوہ کپاس کے مرکزی علاقہ جات میںروایتی اقسام کی کاشت 31 مئی تک جبکہ ثانوی و دیگر علاقہ جات میں 15 مئی تک کاشت مکمل کریں۔

کاشتکار بی ٹی اقسام کے ساتھ 10 فیصد رقبہ پرنان بی ٹی اقسام بھی کاشت کریں تاکہ حملہ آور سنڈیوں میں بی ٹی اقسام کے خلاف قوتِ مدافعت نہ پیدا ہو سکیترجمان محکمہ زراعت پنجاب،، ریسرچ انفارمیشن یونٹ فیصل آبادکے مطابقکپاس کی منظور شدہ بی ٹی اقسام ایم این ایچ- 886 ، وی ایچ- 259 ،بی ایچ- 178 ،سی آئی ایم- 602 ،ایف ایچ لالہ زار،ایف ایچ- 142 ،آئی یو بی- 13 ،ایم این ایچ- 988 ،وی ایچ- 305 ،اے جی سی- 999 اور اے جی سی777 ہیںجبکہ محکمہ زراعت پنجاب کی سفارش کردہ روایتی اقسام سی ایم- 554 ،نیاب- 777 ،سی آئی ایم- 608 ،سی آر ایس ایم- 38 ،ایس ایل ایچ- 317 ،بی ایچ- 167 ،نبجی- 115 ،ایف ایچ- 942 ،نیاب- 852 ،نیاب- 846 ،نیاب کرن ،نیاب- 112 ،سائٹو124 ،سی آئی ایم 620 اور نیاب 2008 ہیں۔

(جاری ہے)

ترجمان نے نے یہ بھی کہا کہ کاشتکار کپاس کا بیج خریدتے وقت دکاندار سے اصل رسید ضرور طلب کریں اور اس بات کا مکمل اطمینان کرلیں کہ اصل رسید پررسید نمبر،،کمپنی کا نام،کوالٹی،لاٹ نمبر،خریداری کی تاریخ،ڈیلر کا نام،ایڈریس اور رابطہ نمبر درج ہو۔کاشتکار غیر قانونی بیج کی فروخت ہونے کی صورت میںاپنے قریبی فیڈرل سیڈ سرٹیفیکشن اینڈ رجسٹریشن ڈیپارٹمنٹ میں تعینات سیڈ انسپکٹر سے رابطہ کریں اور تمام ریکارڈ کے ساتھ جلد از جلد اپنی شکایت درج کروائیں تاکہ مناسب تحقیق کے بعد قانونی کارروائی عمل میں لائی جا سکی

متعلقہ عنوان :