لاہور سمیت پنجاب بھر کے مختلف اضلاع میں رہائش پذیر معصوم بچوں کا غیر محفوظ ہونے کا انکشاف

ہفتہ اپریل 17:43

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) صوبائی دارالحکومت لاہور سمیت پنجاب بھر کے مختلف اضلاع میں رہائش پذیر معصوم بچوں کا غیر محفوظ ہونے کا انکشاف ہوا ہے، یہ انکشاف پنجاب پولیس کے شعبہ انویسٹی گیشن نے اپنی تحقیقات میں کیا ہے، اس حوالے سے جاری کی جانے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یکم جنوری 2018ء سے 21 اپریل 2018ء تک کے عرصے کے دوران پنجاب بھر میں 93 بچیوں کے ساتھ زیادتی کے کیس سامنے آئے ہیں، جن میں سے 4 بچیوں کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا، رپورٹ کے مطابق رواں سال کے پہلے 3 ماہ میں 203 بچوں سے بدفعلی کی گئی، جنسی زیادتیوں کا شکار ہونے والے بچوں اور بچیوں کی سب سے زیادہ تعداد گوجرانوالہ کی ہے، جہاں 62 بچے اور بچیاں جنسی زیادتی کا شکار ہوئیں، لاہور میں ایسے بچوں کی تعداد 45 ہے، سرگودھا میں 8 بچوں اور بچیوں، فیصل آباد میں 20 بچے اور بچیوں، ڈی جی میں 30 بچے اور بچیوں سمیت پنجاب کے دیگر اضلاع میں بھی اسی تناسب سے بچوں اور بچیوں کو زیادتی کا شکار بنایا گیا ہے۔

متعلقہ عنوان :