مذہبی رسومات کی ادائیگی کے بعد سکھ یاتریوں کی بھارت روانگی

لاہور ریلوے اسٹیشن پر سیکرٹری متروکہ وقف املاک بورڈ طارق وزیر خان نے سکھ یاتریوں کو تحائف دے کر رخصت کیا

ہفتہ اپریل 19:10

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) بیساکھی میلے میں شرکت کیلئے آئے سکھ یاتری مذہبی رسومات ادا کرنے کے بعد بھارت واپس روانہ ہوگئے،،لاہور ریلوے اسٹیشن پر سیکرٹری متروکہ وقف املاک بورڈ طارق وزیر خان نے سکھ یاتریوں کو تحائف دے کر رخصت کیا۔۔ریلوے حکام کے مطابق پہلی ٹرین ساڑھے چھ سو یاتریوں کو لے کر واہگہ کے راستے بھارت روانہ ہوئی جبکہ تین خصوصی ٹرینوں کے ذریعے سترہ سو تیس سکھ یاتری واپس بھارت جائیں گے۔

سکھ یاتریوں نے دورہ پاکستان کے دوران ننکانہ صاحب میں جنم استھان گردوارہ میں اکھنڈ پاٹھ کی رسم سے بیساکھی میلے کی تقریبات کا آغاز کیا، جبکہ ماتھا ٹیکی، ارداس، شبد کیرتن اور اشنان وغیرہ جیسی مذہبی رسومات بھی ادا کیں، بیساکھی سکھوں کے نئے سال کا جشن ہے، جو 13 اور 14 اپریل کو منایا جاتا ہے۔

(جاری ہے)

سیکرٹری متروکہ وقف املاک بورڈ طارق وزیر خان نے سکھ یاتریوں کے دورہ پاکستان پر خوشی کا اظہار کیا، ان کاکہناتھا کہ سکھ یاتریوں کی مہمان نوازی کیلئے بہترین انتظامات کیے۔

تاہم رواں برس صورتحال اٴْس وقت کچھ کشیدہ ہوگئی جب بھارتی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ پاکستان میں تعینات بھارتی ہائی کمشنر کو حسن ابدال میں گوردوارہ پنجاب صاحب میں سکھ یاتریوں سے ملاقات نہیں کرنے دی گئی۔تاہم پاکستانی دفتر خارجہ نے ان الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے کی بھارتی کوشش قابل مذمت ہے۔