خیرپور سٹی اسپتال میں ڈاکٹروں کی عدم موجودگی اور آکسیجن کی عدم فراہمی کے سبب دو معصوم بچے زندگی کی بازی ہار گئے

ہفتہ اپریل 19:36

خیرپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) خیرپور سٹی اسپتال میں ڈاکٹروں کی عدم موجودگی اور آکسیجن کی عدم فراہمی کے سبب دو معصوم بچے زندگی کی بازی ہار گئے۔متوفی بچوں کے ورثاء کا ہسپتال انتظامیہ کے خلاف سخت نعرے بازی ۔انتظامیہ کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق خیرپور سٹی ہسپتال میں بچہ وارڈ میں داخل بچوں کو آکسیجن اور داکٹر دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے ان کی زندگیوں کے چراغ گل ہوگئے ۔

بچہ وارڈ میں داخل فوت ہونے والے آٹھ ماہ کے فہد اور وقار جاگیرانی کے ورثاء نے سول ہسپتال کے سامنے احٹجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے الزام لگایاکہ تین روز قبل ان کے بچوں کو بخار ہوا تھا اوروہ گزشتہ شب سے ڈاکٹروں کی عدم موجودگی کے سبب سخت پریشان تھے ایسے میں ہسپتال میں آکسیجن نہ ہونے کا کہا گیا ایسے میں ان کے سامنے ان کے ہاتھوں میں بچے دم توڑ گئے انہوں نے وزیر اعلیٰ سندھ ۔

(جاری ہے)

چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ اور سیکرٹری ہیلتھ سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے بچوں کی زندگیوں سے کھیلنے والے ڈاکٹروں اور ہسپتال انتظامیہ کے خلاف قتل کا مودمہ درج کرکے انہیں انصاف فراہم کیا جائے۔ایم ایس سول ہسپتال ڈاکٹر محمد حسن ابڑو کا کہنا ہے کہ وہ واقعے کی تحقیقات کررہے ہیں تاہم آکسیجن موجود نہیں تھی کے متعلق بھی معلومات لے رہے ہیں ۔اگر ڈاکٹروں کی عدم موجودگی یا آکسیجن کی کمی میں ملوث غفلت برتنے والوں کے خلاف کغکمہ جاتی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔