حکومت نے پورے آزاد کشمیر میں بلاتخصیص تعمیر و ترقی کے منصوبے شروع کر رکھے ہیں، وزیراعظم انفراسٹریکچر کمیونٹی پروگرام کے تحت آزاد کشمیر کے 29حلقوں میں مساوی فنڈز کی تقسیم ، پختہ سٹرکیں ،ویمن یونیورسٹی باغ کی زمین اور دیگر تمام میگا منصوبے شروع کئے جائیں گے،قائمقام وزیر اعظم آزاد کشمیر چوہدری طارق فاروق

ہفتہ اپریل 21:10

باغ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) آزاد کشمیر کے قائمقام وزیر اعظم چوہدری طارق فاروق نے کہا ہے کہ حکومت نے پورے آزاد کشمیر میں بلاتخصیص تعمیر و ترقی کے منصوبے شروع کر رکھے ہیں ۔ضلع باغ میں بھی ڈسٹرکٹ کمپلکس ،ڈسٹرکٹ ہسپتال ،سٹی ڈویلپمنٹ پراجیکٹس کے منصوبے ۔۔وزیراعظم انفراسٹریکچر کمیونٹی پروگرام کے تحت آزاد کشمیر کے 29حلقوں میں مساوی فنڈز کی تقسیم ،تمام حلقہ میں دس،دس کلومیٹر پختہ سٹرکیں ،ویمن یونیورسٹی باغ کی زمین اور دیگر تمام میگا منصوبے شروع کیئے جائیں گے ۔

آزاد کشمیر کی تاریخ میں پہلی مرتبہ آزاد کشمیر کا ترقیاتی بجٹ 10ارب سے بڑھا کر 23ارب روپے ہوا اور تمام فنڈز حکومت پاکستان نے آزاد کشمیر کو ریلیز کیے، کسی قسم کا کوئی کٹ نہیں لگایا ۔

(جاری ہے)

ضلع باغ میں کوریڈور منصوبے کے تحت ٹورازم کا منصوبہ ،مظفرآباد،چکار،سدھن گلی ،نیزہ پیر ،لسڈنہ ،تولی پیر ،بنجوسہ کی تعمیر سے اس سیکٹر کی عوام کو بہتر سفری سہولیات کے ساتھ ساتھ روزگار کے مواقع بھی میسر ہوں گے ، این ٹی ایس کے نفاذ سے آزاد کشمیر کے پڑھے لکھے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع ملیں گے، پبلک سروس کمیشن کے ذریعے بھی تعیناتیاں ہوئی ہیں، جوموجودہ دور کے سنہری کارنامے ہیں مالی سال 2018-19کا بجٹ تیاری کے آخری مراحل میں ہے یہ بجٹ تاریخی بجٹ ہو گا جس میں عوام کو سہولیات زندگی کرنے کے لیے میگا منصوبے رکھے جا رہے ہیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے دورہ باغ کے دوران گزشتہ روز پی ڈبلیو ڈی ریسٹ ہائوس میں ضلع باغ کے صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر وزیر جنگلات سردار میر اکبر خان ،،وزیر اطلاعات و سیاحت راجہ مشتاق احمدمنہاس ،باغ کی انتظامیہ ڈپٹی کمشنر باغ سردار محمد وحید خان ،سپرٹینڈنٹ پولیس باغ جمیل احمد جمیل ۔میونسپل کورپوریشن باغ کے ایڈمنسٹریٹر ملک آفتاب اعوان ،ضلع کونسل باغ کے ایڈمنسٹریٹر راجہ سعید انقلابی ،،پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اور کارکنان مسلم لیگ (ن) بڑی تعداد میں موجود تھے ۔

قائمقام وزیر اعظم نے صحافیوں کے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہماری حکومت آزاد کشمیر کو ترقی کے ایک نئے دورمیں داخل کرنے کے لیے اقدامات اُٹھا رہی ہے ۔آزاد کشمیر میں ٹورازم اور ہائیڈرل کے شعبہ میں ترقی کے وسیع مواقع میسرہیں ہم اس سیکٹر میں ترقی کرنے کے لئے آمدہ بجٹ میں فنڈز مختص کر رہے ہیں جس سے پورے آزاد کشمیر میں کام ہو گا ۔ضلع باغ میں سدھن گلی ،نیزہ پیر ،لسڈنہ اور دھیرکوٹ ،نیلہ بٹ میں سیاحت کی ترقی کے لئے مزیدریسٹ ہائوس اور ٹوریسٹ ریزاٹس قائم کریں گے ۔

انہوں نے صحافیوں کی جانب سے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے بتایا کہ باغ میں پریس کلب کے لئے زمین اور پریس کلب کی عمارت کی تعمیر کے لئے بجٹ مالی سال 2018-19میں فنڈز مختص کر رہے ہیں جو ایک سال کے اندر اندر پریس کلب کی عمارت تعمیر کر کے دیں گے ۔انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کے پڑھے لکھے نوجوانوں کو فنی تعلیم دینے کے لئے ٹیکنیکل کالج قائم کریں گے دو کالجزآزاد کشمیر میں قائم کریں گے ایک نارتھ میں ہو گا اور ایک سائوتھ میں ہو گا ۔

جس سے آزاد کشمیر کے طلبا ء کو فنی تعلیم دی جائے گی ۔جس سے انہیں اندرون ملک اور بیرون ملک روزگار کے مواقع میسر ہوں گے ۔آزاد کشمیر میں مظفرآباد میں کینسر ہسپتا ل بھی بنایا جا رہا ہے ۔جس کی منظوری وزیر اعظم پاکستان نے دی ہے ۔قائمقام وزیر اعظم آزاد کشمیر نے تعلیمی پیکج کے تحت اپ گریڈ ہونے والے اداروں کے حوالہ سے صحافیوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ گزشتہ حکومت نے ایک ٹیچر کی آسامی دیکر تعلیمی اداروں کو اپ گریڈ کر کے بچوں کے ساتھ کھلواڑ کیا ہے ہم نے اب سارے تعلیمی اداروں کو ضروری سٹاف ،عمارتیں اور بجٹ مہیا کیا ہے اور جو تعلیمی ادارے زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں ابھی تک نہ بن سکے اگر ادارہ ختم ہو رہا ہے تو ہم نے حکومت پاکستان کو تحریک کی ہے کہ وہ فنڈز حکومت آزاد کشمیر کو دیے جائیں تا کہ ہم اپنی ADPسے ان اداروں کی عمارتیں بنا سکیں اور اگلے بجٹ میں آزاد کشمیر میں تعلیمی اداروں میں سٹاف کی کمی نہ ہو ۔

انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت نے سابقہ حکومتوں کے جاریہ منصوبوں کو بھی فنڈز دیکر ان کو مکمل کروایہ تا کہ عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولیات میسر ہو سکیں ۔ہسپتال کے اندر ڈسٹرکٹ سطح پر ایمرجنسی فری کی ہے اور تمام ضروری ادویات اور ٹیسٹ عوام کی ان ہسپتالوں میں مفت مہیا ہو رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ دوہرا ٹیکس ہر گز کسی بھی ادارے کو نہیں لینے دیا جائے گا ۔اس کیلئے حکومت نے ایک کمیٹی تشکیل دی ہوئی ہے ۔جس کی سفارشات جلد حکومت کو پیش ہو ں گی ۔انہوں نے کہا کہ بھارتی افواج آئے روز LOCپرکی سول آبادی پر فائرنگ کر کے نہتے لوگوں زخمی اور شہید کررہی ہے اور املاک کو بھی نقصان پہنچایا جا رہا ہے ۔