آسٹریا کاجرمن سرحد پر شناختی دستاویزات کی جانچ شروع کرنے کا فیصلہ

یورپی یونین کی ششماہی صدارت سنبھالنے پر آسٹریا اپنی سرحدوں پر بارڈر کنٹرول بھی سخت کر دے گا،وزیرداخلہ

اتوار اپریل 11:50

ہوانا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اپریل2018ء) آسٹریا جرمنی کے ساتھ اپنی سرحد پر رواں برس کے وسط سے سفری دستاویزات کی جانچ پڑتال کا عمل شروع کر سکتا ہے۔ اس اقدام کا مقصد آسٹریا کے سرحدی کنٹرول کو سخت تر بنانا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق آسٹریا کے انتہائی دائیں بازو کی جماعت سے تعلق رکھنے والے وزیر داخلہ ہیربرٹ کیکل نے کہاکہ رواں برس یورپی یونین کی ششماہی صدارت سنبھالنے پر آسٹریا اپنی سرحدوں پر بارڈر کنٹرول بھی سخت کر دے گا۔

آسٹریا کے وزیر داخلہ ہیربرٹ کیکل نے اس پالیسی میں تبدیلی کا عندیہ دیتے ہوئے ایک اخباری انٹرویو میں کہا کہ عوامی سلامتی کو یقینی طور پر مقدم رکھتے ہوئے سیاحت اور کاروباری شعبوں کے متاثر ہونے کی پرواہ نہیں کرنا چاہیے۔

(جاری ہے)

اپنے شہریوں کے تحفظ کے لیے منطقی حل یہی ہے کہ ہم اپنی سرحدوں پر جانچ پڑتال کے عمل کو مضبوط بنائیں۔ان کا کہنا تھاکہ یکم جولائی سے ممکن ہے کہ ہم جرمنی کی طرف جانے والے راستوں پر جانچ پڑتال کا عمل دوبارہ متعارف کرا دیں۔

انہوں نے مزید کہاکہ ان اقدامات پر آسٹریا میں کاروباری اور سیاحت کے شعبے خوش نہیں ہوں گے، مگر سلامتی عوام کی نگاہ میں سب سے بڑی ترجیح ہے اور مجھے امید ہے کہ اس کے لیے کچھ قربانی ہم سب دیں گے۔انہوں نے کہا کہ جب تک یورپی یونین کی بیرونی سرحدیں مکمل طور پر محفوظ نہیں بنا لی جاتیں، تب تک آسٹریا شینگن معاہدے پر عمل درآمد کو معطل رکھنے کی کوشش کرے گا۔

متعلقہ عنوان :