چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی کا شادمان اتوار بازار کا دورہ ، کم تولنے پر 2دکانداروںکیخلاف ایف آئی آر درج ، ناقص اشیاء فروخت کرنے پر تین سٹالز منسوخ ،چھ کو وارننگ نوٹسز جاری کئے گئے ،صارفین سے بھی آگاہی حاصل کی ، ماہ صیام میں عوام کو گراں فروشوں کے استحصال سے بچانے کیلئے مربوط حکمت عملی طے کر لی ‘ میاں عثمان کی زیر صدارت اجلاس

اتوار اپریل 14:20

لاہور ۔22 اپریل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اپریل2018ء) چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی میاں عثمان نے شادمان اتوار بازار کا اچانک دورہ کر کے اشیائے خوردونوش کی سرکاری نرخوں کے مطابق فروخت اور معیار کا جائزہ لیا ،کم تولنے پر 2دکانداروں کے خلاف ایف آئی آر کا اندراج اور ناقص اشیاء کی فروخت پر تین سٹالز منسوخ کر دیئے گئے جبکہ چھ کو وارننگ نوٹسز جاری کئے گئے ۔

چیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی نے اتوار بازار کے تمام سٹالز کا دورہ کر کے قیمتوں اور معیار کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر میاں عثمان نے خریداری کے لئے آنے والوں سے اشیاء کے معیار اور سرکاری نرخوں کے مطابق فروخت بارے آگاہی حاصل کی ۔قبل ازیںچیئرمین پرائس کنٹرول کمیٹی میاں عثمان نے گراں فروشوں کے خلاف حالیہ کارروائیوں اور رمضان المبارک کی تیاریوں کے سلسلہ میںاجلاس کی صدارت کی ۔

(جاری ہے)

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک میں عوام کو گراں فروشوں کے استحصال سے بچانے کیلئے مربوط حکمت عملی طے کر لی گئی ہے ،بازاروں میں اشیائے خوردونوش کی قلت پیدا نہیں ہونے دی جائے گی اورطلب کے مطابق رسد کو یقینی بنانے کیلئے اسٹیک ہولڈرز کو پیشگی پابند کیا جارہا ہے ،آنے والے دنوں میں صارفین کے حقوق کیلئے آگاہی مہم کا بھی آغاز کیا جارہا ہے ۔

چیئرمین پی سی سی میاں عثمان نے کہا کہ رمضان المبارک کے دوران تمام اوپن مارکیٹوں میں گراں فروشوں کے خلاف موثر کارروائیوں کیلئے اچانک دوروں کی تعداد بڑھائی جائے گی ۔ مرکزی سبزی و فروٹ منڈی اور اشیائے خوردونوش کی تھوک مارکیٹ کے تاجروں سے بھی پیشگی رابطے کر لئے گئے ہیں تاکہ رمضان المبارک میں صارفین کو معیاری اشیاء سرکاری نرخوں کے مطابق میسر آسکیں۔

دکانداروں سے واضح کہوں گا کہ رمضان المبارک میں سرکاری نرخوں سے زائد پر فروخت کرنے سے باز رہیں ورنہ سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔میاں عثمان نے مزید کہا کہ صارفین کے حقوق کی آگاہی کیلئے مہم شروع کی جائے گی اور صارفین کو آگاہ کیا جائے گا وہ سرکارینرخنامے سے زائد قیمت پر ہرگز خریداری نہ کریں ۔ انہوںنے کہا کہ حکومتی سطح پر لگائے جانے والے بازاروں میں بھی معیار اور تول کا جائزہ لینے کیلئے اچانک دورے کئے جائیں گے ۔

متعلقہ عنوان :