خیبرپختون خوا میں آمدن سے زائد اثاثہ جات اور اختیارات کا ناجائز استعمال

نیب نے مختلف سرکاری محکموں کیخلاف کرپشن تحقیقات کا آغاز کردیا تحقیقات ا ٹورازم کارپوریشن ملازمین،ڈی ای او زنانہ،ٹی ایم اے نوشہرہ ایڈمنسٹریٹو آفیسر،سینئر آڈیٹر،اکاؤنٹس آفیسر شانگلہ کیخلاف شروع

اتوار اپریل 23:00

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اپریل2018ء) قومی احتساب بیورو (نیب) نے خیبرپختون خوا میں مختلف سرکاری محکموں کے حکام کیخلاف کرپشن کی تحقیقات شروع کردیں ہیں۔گزشتہ روز پشاور میں نیب ریجنل بورڈ کا اجلاس ہوا،جس میں مختلف محکموں کے حکام کیخلاف تحقیقات کی منظوری دی گئی،اجلاس میں خیبرپختون خوا ٹورازم کارپوریشن کے ملازمین کیخلاف بدعنوانی کی تحقیقات کی منظوریگئی۔

(جاری ہے)

اس کے علاوہ ڈی ای او زنانہ ڈی آئی خان کیخلاف بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز استعمال کی انکوائری بھی شروع کردی گئی ہے۔دوسری جانب ٹی ایم اے نوشہرہ کے ایڈمنسٹریٹو آفیسر کیخلاف بھی کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام میں تحقیقات شروع کرد گئیں،سینئر آڈیٹر،اکاؤنٹس آفیسر شانگلہ کیخلاف آمدن سے زائد اثاثے بنانے پر ضمنی ریفرنس دائر کرنے کا بھی حکم جاری کردیا گیا ہے۔

متعلقہ عنوان :