حزب اللہ ملیشیا کا مخالف سیاسی جماعت کے امیدوار پر وحشیانہ تشدد

شعبنا حکی سیاسی جماعت کے پارلیمانی امیدوار علی الامین پر حزب اللہ ملیشیا کے 40 عناصر نے حملہ کیا ،بیان

پیر اپریل 11:40

تہران(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) ایران نواز شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے کئی درجن لٹھ بردار عناصر نے ایک مخالف سیاسی جماعت کے امیدوار پر وحشیانہ تشدد کیا جس کے نتیجے میں عوامی اور سیاسی حلقوں میں حزب اللہ کے خلاف سخت غم وغصے کی لہر دوڑ گئی ہے۔عرب ٹی وی کے مطابق شعبنا حکی نامی سیاسی جماعت کے پارلیمانی انتخابات کے لیے امیدوار علی الامین پر حزب اللہ ملیشیا کے 40 عناصر نے اس وقت حملہ کیا جب علی امین انتخابی مہم اور پوسٹر لگانے کے لیے شقرا شہر میں سڑک پر نکلے۔

دوسری جانب شعبنا حکی کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں جماعت کے امیدوار پر حزب اللہ ملیشیا کے وحشیانہ تشدد کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ جماعت کے رہ نما فادی سلامہ، احمد اسماعیل، رامی علیق اور عماد قمیحہ کی طرف سے الگ الگ جاری ہونے والے بیانات میں بھی علی الامین پر تشدد کی شدید مذمت کی گئی ہے۔

(جاری ہے)

بیانات میں کہا گیا ہے کہ حزب اللہ کی طرف سے مکالف سیاسی جماعتوں کے ارکان اور امیدواروں کو ڈرانے دھمکانے کی پالیسی کامیاب نہیں ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ حزب اللہ سیاسی مخالفین کو انتقامی کارروائیوں کا نشانہ بنا کر عوام میں جعلی اثرو رسوخ پیدا کرنا چاہتی ہے مگر اس طرح کے واقعات سے حزب اللہ اپنے مقاصد میں کامیاب ہوسکتی ہے اور نہ ہی عوام کی ہمدردیاں حاصل کر سکتی ہے۔

متعلقہ عنوان :