میڈیکل کالج مظفرآباد کا 8کروڑ فنڈ کسی دوسرے علاقہ میں منتقل کرنا مظفرآباد کے طلباء کے ساتھ زیادتی ہے‘رہنماء مسلم کانفرنس

مظفرآباد ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی اور وزراء کرام اپنی وزارتوں کے چکر میں لگے ہوئے ہیں ،مگر عوامی مسائل کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جا رہی

پیر اپریل 14:16

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس کے مرکزی رہنمائوں سابق وزراء کرام پیر سید غلام مرتضیٰ گیلانی، دیوان علی خان چغتائی، شمیم علی ملک، راجہ ثاقب مجید، میر عتیق الرحمان، خواجہ محمد شفیق، انصر پیر زادہ، سید اظہر گیلانی ،شیخ مقصود احمد،سمعیہ ساجد ،اعجاز عباسی ،سید یاسر نقوی، میر امتیاز،سلیم اعوان،راجہ بشیر خان،سید غلام مصطفی نقوی، عاصم نقوی،ہارون آزاد ،خواجہ نعمان ،راجہ محسن مجید ،راجہ احسان حیدر قذافی الطاف ،عرفان جاوید عباسی ،راجہ عاقب سفیر و دیگر نے کہا ہے کہ میڈیکل کالج مظفرآباد کا 8کروڑ فنڈ کسی دوسرے علاقہ میں منتقل کرنا مظفرآباد کے طلباء کے ساتھ زیادتی ہے،حکومت نے عوامی مسائل حل کر نے کے بجائے عوام کو پریشان کرنا شروع کر رکھا ہے، کل تک جو مظفرآباد کے چیمپئن بنے تھے آج وہ اس پر کیوں خاموش ہیں ،مظفرآباد ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی اور وزراء کرام اپنی وزارتوں کے چکر میں لگے ہوئے ہیں ،مگر عوامی مسائل کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جا رہی ،انہوں نے کہا کہ میڈیکل کالج کی اپنی ضروریات ہیں جنہیں پورا کیا جائے،عملہ کو تنخواہیں دی جائیں اور جدید لیبارٹری قائم کی جائے اور طلبہ کا ہاسٹل بنا یا جائے۔

(جاری ہے)

یہ کام مقدم ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز میڈیا سے گفتگو کر تے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ مظفرآباد کی قیادت کو اس حوالے سے احتجاج کرنا چاہیے ۔اگر مظفرآباد کی قیادت محض اپنا اقتدار بچانے میں لگی رہی تو پھر آئندہ وہ اپنا بوریا بستر گول سمجھے۔مظفرآباد سے پہلے بھی زیادتی ہوئی ہے۔میڈیکل کی 80سیٹوں میں سے صرف 10یہاں دی گئی باقی سب باہر منتقل کردی گئی ۔اگر حکومت باز نہ آئی اور فنڈز منتقل کرنے پر بضد رہی تو پھر ہم احتجاجی دھرنا دینے پر مجبور ہوں گے جس میں میڈیکل کالج کے طلبہ ،تمام دینی وسیاسی جماعتوں کے قائدین وکارکنان اور تاجر شرکت کریں گے جس کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی۔

متعلقہ عنوان :