کینیڈا اورجاپان کا شمالی کوریا پر دباؤ جاری رکھنے پر اتفاق

پیر اپریل 14:20

ٹورانٹو ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) کینیڈ اورجاپان نے شمالی کوریا کی جانب سے جوہری اور میزائل تجربات کو معطل کرنے کے اعلان کے باوجود اٴْس پر انتہائی دباؤ ڈالنے کے سلسلے کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

کینیڈا کے ذرائع ابلاغ کے مطابق ٹورانٹو میں منعقدہ گروپ آف سیون کے وزرائے خارجہ کے اجلاس سے قبل کینیڈین ہم منصب کرسٹیا فری لینڈ سے بات چیت میں جاپانی وزیر خارجہ تارو کونو نے شمالی کوریا کے وسیع پیمانے پر تباہی لانے والے ہتھیاروں اور میزائلوں کو مکمل طور پر ختم کرنے تک اس پر دباؤ جاری رکھنے کی اہمیت پر زور دیا۔

انھوں نے کہا کہ شمالی کوریا کا حالیہ عہد بین الاقوامی برادری کے مطالبات پر پورا نہیں اترتا ہے۔ بات چیت کے دوران کینیڈین وزیر خارجہ فری لینڈ نے شمالی کوریا کی پابندیوں سے بچنے کی کوششوں سے نمٹنے کے لیے تعاون کرنے پر اتفاق کا اظہا کیا۔انہوں نے اس بات کی بھی تصدیق کی کہ گروپ آف سیون وزرائے خارجہ کے اجلاس اور جون میں ہونے والے سربراہی اجلاس میں ایک مضبوط پیغام بھیجا جائے گا جس میں شمالی کوریا کے معاملے سمیت بین الاقوامی برادری کو درپیش مسائل کے خلاف مل کر کام کرنے کا عہد کیا جائے گا۔

متعلقہ عنوان :