سعودی عرب میں پہلی مرتبہ جدہ کے پاکستانی قونصل خانے میں خاتون قونصلر کاتقرر

Mian Nadeem میاں محمد ندیم پیر اپریل 14:11

سعودی عرب میں پہلی مرتبہ جدہ کے پاکستانی قونصل خانے میں خاتون قونصلر ..
جدہ(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔23 اپریل۔2018ء) سعودی عرب اور پاکستان کے سفارتی تعلقات کی70سالہ تاریخ میں پہلی مرتبہ جدہ میں پاکستانی قونصل خانے میں خاتون قونصلر کاتقررکیا گیا ہے۔ پاکستانی سفارت خانے کی پہلی خاتون قونصلر فوزیہ فیاض کا کہنا ہے کہ پاکستان ایک ترقی پسند ملک ہے اورخواتین تمام شعبوں میں بہت خوش اسلوبی سے کام کررہی ہیں۔

پاکستانی معاشرہ خواتین کے کردار کو تسلیم کرتا ہے اور پاکستانی وزارت خارجہ نے خواتین کے لئے ہر سطح پر ترقی کے دروازے کھول دیئے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ گزشتہ 70 برسوں کے دوران سعودی عرب میں کوئی خاتون سفارتکارتعینات نہیں کی گئی، مملکت سعودی عرب میں سفارتی خدمات سرانجام دینے والی وہ پہلی خاتون سفارت کار ہیں، قونصل خانے میں ان کی موجودگی کی وجہ سے خواتین کی آمدمیں اضافہ ہوا ہے۔

فوزیہ فیاض نے مزید بتایا کہ میں قونصلر کے سیکشن کی انچارج ہوں، جو دیار غیر میں مقیم پاکستانیوں کو پاسپورٹ، قومی شناختی کارڈ، تجدید اور توسیع، سفری دستاویزات کی سہولتیںفراہم کرتا ہے۔فوزیہ فیاض کی پہلی تقرری واشنگٹن ڈی سی میں ہوئی تھی ، انہوں نے بھارت میں نئی دہلی میں بھی خدمات سر انجام دی ہیں۔