زرداری ،ْنواز شریف سے کوئی اتحاد نہیں ہوگا ،ْعمران خان

اصل مسئلہ بکنے والوں کا ہے،خریدنے والوں کی ذمے داری الگ ہے ،ْ میڈیا سے گفتگو

پیر اپریل 15:20

لندن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) نے 18 ویں ترمیم اور میثاق جمہوریت کے تحت مک مکا کیا ،ْآصف علی زرداری اور نواز شریف سے کوئی اتحاد نہیں ہوگا۔گزشتہ روز میڈیا سے گفتگو میں انہوںنے کہا کہ پچھلی بار نگراں حکومت کیلئے دونوں جماعتوں نے مک مکا کیا، حکومت کس کی ہوگی اور الیکشن کمیشن میں کون ہوگا، ان دونوں جماعتوں نے مک مکا کیا۔

تحریک انصاف کے سربراہ نے کہا کہ نگراں حکومت کا مقصد صاف و شفاف الیکشن کروانا ہوتا ہے تاہم تمام جماعتوں نے 2013 کے الیکشن میں کہا کہ دھاندلی ہوئی۔۔سینیٹ انتخابات میں امیدواروں کی جانب سے مبینہ طور پر رقم کے عوض ووٹ دیے جانے کے معاملے پر عمران خان نے کہا کہ اصل مسئلہ بکنے والوں کا ہے،خریدنے والوں کی ذمے داری الگ ہے۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ عوام کے ووٹ لے کر جنہوں نے خود کو نیلام کیا اصل ذمے دار وہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے لوگوں کے خلاف ایکشن لیا، کیا دیگر جماعتیں بھی اپنے لوگوں کے خلاف ایکشن لیں گی کیا ان میں اخلاقی جرات ہے، اگر انہوں نے ایکشن نہ لیا توبتا دوں گا کہ ان کے کون سے لوگ بکے۔ان کے مطابق امیدوار پہلی بار نہیں پچھلے 30 سال سیبک رہے ہیں، تمام جماعتوں کے سربراہوں کو ان لوگوں کے بکنے کا علم ہے۔انہوںنے کہاکہ چودھری سرور کو اپوزیشن اور ہمیں جوائن کرنے والے اراکین ن لیگ نے بھی ووٹ دیے۔

اس موقع پر انہوں نے اعلان کیا کہ 29 اپریل کو لاہور میں ’مدر آف آل‘ جلسہ ہوگا، لوگ ثابت کریں گے کہ وہ قانون کی بالادستی کیلئے کھڑے ہیں۔۔عمران خان نے کہا کہ سائیکل اور رکشا چور کو جیل میں ڈالا جاتا ہے تاہم یہاں 300 ارب روپے ملک کا چوری کرنے والے کو وزیراعظم 40 گاڑیوں کا پروٹوکول دیتے ہیں، کیوں بڑے لوگوں کو پروٹوکول اور غریب کی تھانے میں چھترول ہوتی ہی ۔